کورونا کے باعث فرانس کے 9 شہروں میں کرفیو نافذ، وزیر صحت کے گھر پر چھاپہ

17

پیرس: فرانس میں کورونا وبا کی دوسری لہر کے دوران بڑھتے ہوئے نئے کیسز کی وجہ سے پیرس سمیت 9 شہروں میں کرفیو نافذ کردیا گیا ہے جب کہ وبا کے دوران حکومتی ناقص کارکردگی کیخلاف تفتیش کے حکم پر وزیر صحت کے گھر کی تلاشی بھی لی گئی۔

عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق چند ماہ قبل فرانس کی عدالت نے حکومت کی جانب سے کورونا وبا سے نمٹنے کے لیے تاخیر سے اقدامات شروع کرنے، طبی آلات و سہولیات میں کمی اورغیر سنجیدگی کا مظاہرہ کرنے پر قانون نافذ کرنے والے اداروں کو تفتیش کا حکم دیا تھا جس پر وزیر صحت اولیور ویرن اور نیشنل ہیلتھ ایجنسی کے ڈائریکٹر جیرومی سالمون کے گھر پر چھاپے مارے گئے اور تلاشی لی گئی۔

عدالتی حکم پر فرانس کے وزیراعظم جین کاسٹیکس سے بھی پوچھ گچھ جاری ہے۔ دوسری جانب وزیراعظم اور وزیر صحت نے کورونا کی دوسری لہر سے نمٹنے کے لیے پیرس سمیت 9 شہروں میں کل رات 12 بجے سے صبح 7 بجے تک مکمل کرفیو نافذ کرنے کا فیصلہ کیا ہے جس کے لیے 12 ہزار پولیس اہلکاروں کو تعینات کیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ فرانس میں تاحال کورونا کے 7 لاکھ 50 ہزار 451 کیسز سامنے آئے ہیں جب کہ اس موزی وائرس سے ہلاک ہونے والوں کی تعداد 32 ہزار 780 ہوگئی ہے اور کچھ عرصے کے وقفے کے بعد اب روزانہ کی بنیاد ہر سامنے آنے والے نئے کیسز میں دوبارہ اضافہ ہو رہا ہے۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.