’محسن فخری زادہ کو ریموٹ کنٹرول ٹیکنالوجی کی مدد سے قتل کیا گیا‘

479

تہران: ایران کا کہنا ہےکہ اسرائیل نے سائنسدان محسن فخری زادہ کو ریموٹ کنٹرول ٹیکنالوجی کی مدد سے قتل کیا۔

عرب خبر رساں ادارے کے مطابق محسن فخری زادہ کی تدفین کے موقع پر بات کرتے ہوئے ایران کی قومی سلامتی کونسل کے سیکرٹری علی شمخانی نے ایک بار پھر سائنسدان کے قتل کا ذمہ دار اسرائیل کو ٹھہرایا۔

انہوں نے کہا کہ اسرائیل نے فخری زادہ کو قتل کرنے کے لیے ریموٹ کنٹرول ٹیکنالوجی کا استعمال کیا، بدقسمتی سے یہ آپریشن بہت پیچیدہ تھا اور الیکٹرانک آلات کے ذریعے کیا گیا جب کہ جائے وقوعہ پر کوئی شخص موجود نہیں تھا۔

علی شمخانی کا کہنا تھا کہ کوئی شک نہیں فخری زادہ کے قتل کے پیچھے اسرائیل اور اس کی خفیہ ایجنسی کا ہاتھ ہے کیونکہ اسرائیل فخری زادہ کو 20 سال سے قتل کرنا چاہتا تھا اور اس مرتبہ ہمارے دشمن نے مکمل طور پر پیشہ ورانہ اور انتہائی منظم طریقہ استعمال کیا جس میں وہ کامیاب ہوا۔

قومی سلامتی کونسل کے سیکرٹری نے الزام عائد کیا کہ ایران کی بیرون ملک موجود ایک تنظیم مجاہدین خلق بھی اس حملے میں ملوث ہے۔