دھاتی اشیا کو روبوٹ بنانے والا ’مقناطیسی اسپرے‘

281

ہانگ کانگ: اب ایک مقناطیسی پھوار سے عام اشیا کو بہت آسانی سے لڑھکنے، چلنے، پھرنے اور بھاگنے والے روبوٹ میں بدلا جاسکتا ہے۔

سٹی یونیورسٹی آف ہانگ کانگ کے سائنسدانوں نے ایک خاص اسپرے بنایا ہے جس کی تہہ دھاتی اشیا پر چڑھنے کے بعد وہ عجیب و غریب روبوٹ میں تبدیل ہوجاتے ہیں۔ ان کی مختلف حرکات کو دلچسپ انداز میں استعمال کرکے کئی کام لیے جاسکتےہیں۔ جن میں طبی استعمال اور انسانی جسم کے اندر دوا پہنچانے جیسے مشکل امور شامل ہیں۔

یہ تحقیق چند ملی میٹر کیڑے نما روبوٹ پر کی گئی ہے جو انسانی جسم میں رینگ سکتے ہیں۔ سٹی یونیورسٹٰی کی ٹیم سال 2018 سے ان پر کام کررہی ہے۔ اب ربڑنما سلیکون سے بنے روبوٹ پر خردبینی مقناطیسی ذرات کی بوچھاڑ انہیں اچھلنے، کودنے اور رینگنے والے روبوٹ میں تبدیل کرسکتی ہے۔ لیکن اس کے لیے بیرونی طور پر مقناطیسی میدان فراہم کرنا ہوگا۔