امریکی انتخابات: عدالت کا دیر سے آنے والے بیلٹس الگ کرنے کا حکم

321

سپریم کورٹ کے جسٹس سیمیول الیٹو نے پینسل وینیا میں الیکشن بورڈ کو حکم دیا ہے کہ وہ ریاست کے حکم کی پیروی کرتے ہوئے الیکشن کے دن دیگر بیلٹس سے رات 8بجے کے بعد موصول ہونے والے میل ان بیلٹس کو علیحدہ کر لیں۔

خبر رساں ایجنسی رائٹرز کے مطابق یہ احکام ایک ایسے موقع پر آیا ہے جب عدالت کے سامنے ایک کیس زیر التوا ہے کہ وہ ستمبر میں اعلیٰ عدلیہ کی جانب سے سنائے گئے فیصلے کو کالعدم قرار دے جو ایکشن حکام کو اس بات کی اجازت دیتا ہے کہ وہ منگل کے الیکشن کے بعد جمعہ کو پہنچائے گئے میل ان بیلٹس کو بھی گنتی میں شامل کر لے۔

سپریم کورٹ کے جج الیٹو نے یہ حکم پینسل وینیا کے ریپبلیکنز کی جانب سے کی گئی درخواست پر جاری کیا جس میں کہا گیا ہے کہ وہ بیلٹس کو الگ کردیں۔