فرانس اورکینیڈا میں حملے،2افراد ہلاک،پادری سمیت6زخمی

182

فرانس اور کینیڈا میں دہشتگردی کے واقعات ہوئے ہیں جن کے نتیجے میں پادری سمیت6 افراد زخمی اور2 ہلاک ہوگئے ہیں۔

کینیڈا کے شہر کیوبک میں پارلیمنٹ کے باہر حملے میں 2افرادہلاک اور 5زخمی ہوئے۔

پولیس نے ایک20 سالہ نوجوان کو گرفتار کرلیا ہے اور عوام کو گھروں میں رہنے کی تاکید کی ہے۔

پولیس کے مطابق نوجوان نے رات کے وقت متعدد لوگوں پر خون آلود ہتھیار کے ساتھ حملہ کیا۔ حملہ آور کو مقامی وقت ایک بجے گرفتار کرلیا گیا تھا۔

حملہ آور کی گرفتاری کے بعد بھی لوگوں کو گھروں میں رہنے کی ہدایت کی گئی ہے۔ حملے کی ابتدائی اطلاع رات10 بجے دی گئی تھی اور تین گھنٹے بعد نوجوان کو گرفتار کر لیا گیا تھا۔

پولیس کے مطابق حملہ آور کو گرفتار کرنے کے بعد اسپتال لے جایا گیا ہے۔

دہشتگردی کا دوسرا واقعہ فرانس کے شہر لیون میں پیش آیا جہاں نامعلوم حملہ آور نے ایک چرچ کے باہر فائرنگ کرکے پادری کو زخمی کردیا۔

عینی شاہدین نے بتایا شام چار بجکر چار منٹ پر پادری پر اس وقت دو فائر کیے گئے جب وہ چرچ بند کر رہے تھے۔

مقامی میڈیا کے مطابق فائرنگ سے پادری کو زخمی کرنے والا حملہ آور جائے وقوعہ سے فرار ہونے میں کامیاب ہوگیا ہے اور اس کی تلاش میں چھاپے مارے جا رہے ہیں۔

یہ فرانس میں دو ہفتوں کے دوران ہونے والا تیسرا حملہ ہے۔ جمعرات کو فرانس کے نیس شہر میں ایک چرچ کے قریب حملہ ہوا تھا۔ حملے میں تین افراد ہلاک اور متعدد زخمی ہوگئے تھے۔

اس سے قبل 17اکتوبر کو فرانس کے دارالحکومت پیرس میں ایک حملہ آور نے استاد کا سرقلم کر دیا تھا۔ فرانسیسی صدر نے اس واقعے کو دہشتگردی کا عمل قرار دیا تھا۔

واقع کے بعد پولیس نے حملہ آور کو گرفتار کرنے کی کوشش کے دوران گولی مار کر ہلاک کر دیا تھا۔