چین کی برطانیہ کو ہانگ کانگ کے شہریوں کو شہریت کی پیشکش پر تنبیہ

216

چین نے برطانیہ کی جانب سے ہانگ کانگ کی تقریباً 30 لاکھ آبادی کو شہریت کی پیش کش کے منصوبے کی تصدیق کے بعد لندن کو خبردار کیا ہے کہ وہ ‘فوری طور اس غلطی کو درست کرے’۔

برطانوی نشریاتی ادارے (بی بی سی) کی رپورٹ  کے مطابق برطانیہ کی جانب سے ہانگ کانگ کے شہریوں کے لیے یہ پیش کش جولائی میں کی گئی تھی جب چین نے برطانیہ کے سابقہ کالونی پر سیکیورٹی قانون متعارف کروایا تھا۔

خیال رہے کہ چین نے رواں برس ہانگ کانگ میں سیکیورٹی قانون متعارف کروایا تھا جس پر عالمی سطح پر تنقید کی گئی تھی اور اس قانون کو شہریوں کی آزادی پر حملہ قرار دیا گیا تھا۔

چین اس سے قبل بھی برطانیہ کو ہانگ کانگ سے متعلق خبردار کرچکا ہے کہ وہ چین کے اندرونی معاملات میں مداخلت سے باز رہے اور تازہ تنبیہ چین کی وزارت خارجہ کی جانب سے جاری کی گئی ہے۔

رپورٹ کے مطابق برطانیہ کی پیش کش ہانگ کانگ کے تمام شہریوں کے لیے نہیں ہے بلکہ صرف ان شہریوں کو دی گئی ہے جو برٹش نیشنل اوورسیز (بی این او) پاسپورٹ کے حامل ہیں۔

برطانیہ کی پیش کش 1997 سے قبل پیدا ہونے والے ہانگ کانگ کے شہریوں کے لیے ہے جو خطے کو چین کے حوالے کرنے سے پہلے پیدا ہوئے تھے۔