جرمن پارلیمنٹ سائبر حملے پر روس کے ملٹری انٹیلی جنس سربراہ کا يورپ میں داخلہ بند

284

برسلز: یورپی یونین نے جرمنی کی پارلیمنٹ کے کمپیوٹر سسٹم پر سائبر حملے کے مرتکب روس کی ملٹری انٹیلی جنس کے سربراہ ایگور کوستیو کوف اور ایک افسر پر نے سفری پابندیاں عائد کردی ہیں۔

عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق ہیکرز نے 2015 میں جرمنی کی وفاقی پارلیمان بنڈس ٹاگ کے کمپیوٹر سسٹم پر سائبر حملہ کرکے ڈیٹا ہیک کرليا تھا۔ جرمنی نے سائبر حملے کا ذمہ دار روس کو قرار دیا تھا جس پر یورپی یونین نے ایکشن لیتے ہوئے تحقیقات کا آغاز کیا تھا۔

یورپی یونین نے جرمنی پارلیمنٹ پر سائبر حملے کے مرتکب روس کی ملٹری انٹیلی جنس کے سربراہ اور ایک افسر کو قرار دیتے ہوئے دونوں پر یورپی ممالک کے داخلے پر پابندی عائد کردی اور ان کے یورپی ممالک میں اثاثوں کو منجمد کردیا۔

روس نے شروع سے ہی تردید کرتے ہوئے ان الزامات کو ‘من گھڑت کہانی‘ قرار دیا تھا جب کہ ملٹری انٹیلی جنس سربراہ ایگور کوستیو کوف کا کہنا تھا کہ یورپی یونین کے پاس جرمن پارلیمنٹ پر سائبر حملے کے دعوے کے حق میں ہمارے خلاف کوئی ثبوت نہیں ہیں۔