پاکستان اور اس کے امیر

231

پاکستان میں بہت پیسہ ہے، یہ ہم بار بار سنتے ہیں جبکہ ملک قرضے میں ڈوبا ہوا ہے اور ہر کچھ دن میں ہم کو خبر نظر آتی ہے کہ کسی غریب نے بیروزگاری سے تنگ آ کر خودکشی کر لی لیکن ہم امریکہ، کینیڈا میں رہنے والے جب کبھی پاکستان جاتے ہیں تو وہاں کے بازار، دکانیں دیکھ کر کبھی بھی نہیں لگتا کہ یہاں کوئی مشکلات یا غربت ہے۔
مہنگی مہنگی دکانیں،ریسٹورنٹ چھٹی کا دن ہو یا نہ ہو لوگوں سے بھری رہتی ہیں، گھنٹوں گھنٹوں انتظار کے بعد آپ کو ریسٹورنٹ میں جگہ ملتی ہے اگر وہاں آپ کی ایڈوانس بکنگ نہیں ہے، امریکہ میں لوگ سو ڈالر خرچ کرتے ہوئے دس دفعہ سوچتے ہیں لیکن پاکستان میں لوگ ڈالر یعنی پاکستان پانچ پانچ ہزار روپے کے دو نوٹ نکالنے میں پانچ منٹ نہیں لگاتے۔
آپ بھی سوچتے ہوں گے کہ پاکستان میں رہنے والوں کے پاس کتنا پیسہ ہے، پاکستان میں اس وقت آٹھ سو ملین سے زیادہ لوگ رہتے ہیں، ایک ایک آدمی کیا کمارہا ہے، اس ایک کالم میں تو لکھنا ناممکن ہے اسی لئے آج ہم آپکو ان آٹھ سو ملین میں سے صرف آٹھ پاکستانیوں کے بارے میں بتاتے ہیںوہ آٹھ پاکستانی جو آٹھ ملین میں سے بچے باقی پاکستانیوں سے سب سے زیادہ امیر ہیں۔
آٹھویں نمبر پر امیر ترین شخص کا نام ہے ناصر شون ہے، یہ پیدا تو کراچی میں ہوئے مگر اب دوبئی میں رہتے ہیں اور شون گروپ کے چیئرمین ہونے کے ساتھ ساتھ وہ کئی رئیل سٹیٹس کے پروجیکٹس میں بھی انویسٹ کرتے ہیں، اس وقت ان کی ورتھ ایک بلین ڈالر ہے اور اسی وجہ سے یہ وہ پہلے پاکستانی ہیں جنہوں نے رولز رائس گاڑی منگوائی، پاکستان میں اپنے استعمال کے لئے۔
ملک ریاض اس وقت ساتویں نمبر پر سب سے امیر پاکستانی ہیں، ان کی نیٹ ورتھ 1.1بلین ڈالرز ہے اور انہوں نے اپنا سارا پیسہ رئیل سٹیٹ سے کمایا ہے جبکہ ملک صاحب کا تعلق کسی امیرخاندان سے نہیں تھا پھر بھی اپنی ذاتی لگن سے یہ سب کچھ کمایا اور اسی لئے پہلے جب ناصر شون پاکستان میں پہلے رولز رائس چلانے والے تھے اسی طرح ملک ریاض پاکستان میں پہلے BENTLEYچلانے والے تھے۔
پاکستان میں ہوٹلز کی بات کی جائے تو ذہن میں سب سے پہلے صدر الدین ہاشوانی کا نام آتا ہے جن کے ملک بھر میں پرل کانٹی نینٹلز اور میریٹ ہیں، ہاشوانی گروپ کے چیئرمین ہونے کے ساتھ ساتھ وہ پٹرولیم اور فارما سوٹیکل انڈسٹریز میں بھی بڑے شراکت دار ہیں، ہاشوانی صاحب کی نیٹ ورتھ اس وقت 1.1بلین امریکن ڈالرز ہے۔
سابق وزیراعظم نواز شریف کی نیٹ ورتھ اس وقت 1.4بلین امریکن ڈالرز ہے اور ان کے کامیاب بزنس ہیں جن میں شوگر ملز، سٹیل ملز اور زرعی انڈسٹری بھی شامل ہے۔
Best Way gruopکے چیئرمین اور یو بی ایل کے ڈپٹی چیئرمین انور پرویز جو یوکے میں رہتے ہیں، اس وقت دنیا میں چوتھے نمبر پر سب سے زیادہ امیر پاکستانی ہیں، ان کی نیٹ ورتھ اس وقت 1.6بلین ڈالرز ہے، حیران کن طور پر انور پرویز نے پہلی جاب یو کے مین بس کنڈکٹر کی کی تھی، پچاس سال پہلے، کئی لوگ جو کسی جگہ کے بارے میں زیادہ نہیں جانتے وہاں ان کیلئے آگے بڑھنا مشکل ہوتا ہے لیکن انور پرویز میں آگے بڑھنے کی امنگ تھی، اپنی لگن اور زندہ دلی کے ساتھ وہ آگے بڑھتے گئے، بس کنڈکٹری سے شروعات کر کے آج وہ یو کے کے امیر ترین لوگوں میں شمارہوہتے ہیں۔
تیسرے نمبر پر ہیں سابق صدر آصف علی زرداری، ان کے اپنے والد حکم علی زرداری بھی بزنس مین تھے مگر آصف علی زرداری جتنے کامیاب نہیں، آصف صاحب کے پاس پاکستان کے علاوہ مڈل ایسٹ، یوکے اور یو ایس اے میں بھی بہت سی انویسٹمنٹ ہوئی ہیں اور ان کی نیٹ ورتھ 1.8بلین ڈالرز کے آس پاس ہے۔
منشا گروپ کے میاں محمد منشا پاکستان میں بزنس کمیٹی کے لئے ایک بہت پراثر شخصیت ہیں، لاہور سے تعلق رکھنے والے منشاء اس وقت 2.5بلین ڈالر کی ورتھ رکھتے ہیں، وہ ایم سی بی، نشاط گروپ اور آدم جی گروپ کے مالک ہیں، ٹیکسٹائل سے لے کر بینکنگ تک منشا صاحب کے قدم ہر اس بزنس میں جمے ہوئے ہیں جو نہایت کامیاب سمجھے جاتے ہیں، منشاء وہ مثال ہیں جس سے آج وہ پاکستانی نوجوان جو آگے چل کر بزنس میں جانا چاہتے ہیں بہت کچھ سیکھ سکتے ہیں اپنے مستقبل کو کامیاب بنانے کیلئے۔
شاہد خان دنیا کے سب سے امیر پاکستانی ہیں، پاکستان تو کیا اگر آپ دنیا کے سب لوگوں کو ملا لیں تو وہ دنیا میں امیروں کی لسٹ میں سب سے اوپر آتے ہیں، شاید خان کا تعلق لاہور سے ہے وہ 1976میں انجینئرنگ کرنے پاکستان سے یو ایس اے آئے تھے، پہلی جاب جو امریکہ میں کی وہ ڈش واشنگ کی تھی، انجینئرنگ ختم کی اور ایک کمپنی میں کام کرنے لگ گئے، تجربہ حاصل کیا اور ساتھ ہی اپنے ذاتی بزنس کی بنیادڈالی، شاید نے پچاس ہزار ڈالرز کا اسمال بزنس لون لیا اور ایسے کار بمپرز بنائے جو پلاسٹک کا ہونے کے باوجود اتنا ہی اچھا کام کرتا جیسے کوئی سٹیل کا بمپر، وہی بمپر جو آج آپ ہر گاڑی پر لگا دیکھتے ہیں اس نے شاید خان کو بلینئر بنا دیا، آج ان کی نیٹ ورتھ 4.5بلین ڈالرز ہے۔
Flexand Gateان کی امریکہ میں واقع کمپنی ان چند بڑی کمپنیوں میں سے ہے جو ابھی تک پرائیویٹ ہیں۔
شاید خان کی شہرت کی ایک وجہ جیکسن ول جیگوارز بھی ہے جس کے وہ مالک ہیں اور اسی لئے شاہد خان اور ان کی مونچھیں پورے امریکہ میں مشہور ہیں۔
یہ تھے امیر ترین پاکستان، یہ ہیں وہ پاکستانی جو بلینئرز ہیں اور جو بہت خرچ کریں تو سمجھ میں آتا ہے لیکن باقی پاکستانی کیسے بلینئرز کی طرح خرچ کررہے ہیں یہ معمہ ہمارے اور آپ کیلئے حل کرنا ناممکن ہے۔