نواز الدین صدیقی بھی بھارت میں ذات پات کی تفریق پر بول پڑے

264

معروف بالی ووڈ اداکار نواز الدین صدیقی نے کہا ہے کہ فلموں میں شہرت پانے کے باوجود بھی اُنہیں ذات پات کی وجہ سے گاؤں والوں کے امتیازی سلوک کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔

بھارتی میڈیا کو انٹرویو دیتے ہوئے بالی وڈ اداکار کا کہنا تھا کہ ان کی دادی کا تعلق ایک نچلی ذات سے تھا اور یہی وجہ ہے کہ انہیں آج تک گاؤں والوں نے قبول نہیں کیا۔

نواز الدین صدیقی نے کہا کہ ٹوئٹر پر لوگ کہتے ہیں کہ بھارت میں ذات پات کا کوئی نظام نہیں لیکن اگر وہ ان کے گاؤں جیسی کسی جگہ کا دورہ کریں تو اُنہیں حقیقت نظر آجائے گی ۔

اس دوران  بھارتی اداکار نے دلت لڑکی سے اجتماعی زیادتی کے واقعے پر شدید برہمی کا اظہار کیا۔

خیال رہے کہ رواں سال اپریل میں امریکہ کے کمیشن برائے عالمی مذہبی آزادی کمیشن نے اپنی سالانہ رپورٹ میں بتایا تھا کہ بھارت میں شہریوں کو مذہبی آزادی حاصل نہیں ہے۔