امریکی ریاست مشی گن کی گورنر اغوا کرنے کا منصوبہ ناکام، 13 افراد گرفتار

253

واشنگٹن:امریکا میں صدارتی انتخابات سبوتاژ کرنے کی سازش بے نقاب ہو گئی، ریاست مشی گن کی گورنرکےاغوا کا منصوبہ ناکام بناتے ہوئے 13 افراد کو گرفتار کر لیا گیا۔ حکام کا کہنا ہے ملزمان گورنر کو تین نومبر کے انتخابات سے قبل اغوا کرکے ملک میں خانہ جنگی کروانا چاہتے تھے۔

امریکی ادارے ایف بی آئی نے ریاست مِشی گن کی گورنر گریچن وٹمر کے اغوا کی سازش ناکام بنا دی۔ حکام کا کہنا ہے اغوا کا مقصد انتخابات سے قبل خانہ جنگی شروع کرانا تھا۔ اہلکاروں کی کوششوں سے شہریوں کی زندگی خطرے میں ڈالنے کا منصوبہ بے نقاب ہوا۔

ملزمان کا منصوبہ صرف اغوا نہیں بلکہ بم دھماکے کرنا اور اہم عمارتوں پر قبضہ بھی شامل تھا، ملزمان نے کیپٹل بلڈنگ پر حملے کی ٹریننگ بھی کی،مشی گن کی ڈیموکریٹک گورنر کا کہنا تھا کہ صدر ٹرمپ سفید فام نسل پرستی کو ہوا دے رہے ہیں، انتہا پسند گروپ ٹرمپ کے الفاظ کو ایکشن کے طور پر دیکھتے ہیں۔
ایف بی آئی کو سوشل میڈیا کے ذریعے اس سازش کا علم ہوا۔ حکام کے مطابق ملزمان کا تعلق مقامی سفید فام انتہا پسند ملیشیا گروپ سے ہے۔ صدر ٹرمپ نے ٹویٹ کرتے ہوئے کہا ہےکہ کسی بھی قسم کے تشدد کو برداشت نہیں کیا جائے گا۔ گورنر نے میرا شکریہ ادا کرنے کے بجائے مجھے ہی سفید فام نسل پرست کہہ دیا۔