20 سال سے لڑی جانیوالی جنگ 20 دن میں ختم نہیں کر سکتے: افغان صدر

352

دوحہ:افغانستان کے صدر اشرف غنی کا کہنا ہے کہ 20 سال سے لڑی جانے والی جنگ کو 20 دن میں ختم نہیں کر سکتے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق اشرف غنی کا یہ بیان ایسے وقت آیا ہے جب افغانستان میں تقریباً دو عشروں سے جاری جنگ کے خاتمے کے لیے فریقین کے مابین دوحہ میں جاری مذاکرات تعطل کا شکار ہوگئے ہیں۔

خبر رساں ادارے کے مطابق افغان حکومت اور طالبان کے درمیان جاری بین الافغان مذاکرات تعطل کا شکار ہوجانے کے بعد افغانستان کے صدر اشرف غنی نے طالبان سے  جرأت کا مظاہرہ اور قومی جنگ بندی‘ کا اعلان کرنے کی اپیل کی ہے۔

قطر کے دو روزہ دورے کے اختتام پر صدر اشرف غنی نے دوحہ میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ افغانستان کے دیرینہ تنازع کو  بندوق کی بجائے مذاکرات کے ذریعے‘ حل ہونا ہے۔ کوئی بھی طاقت آپ (طالبان) کو مٹا نہیں سکتی۔

اس موقع پر متعدد سفارت کار، ماہرین تعلیم اور دیگر اہم شخصیات موجود تھیں۔

خیال رہے کہ خلیجی ریاست قطرکی میزبانی میں افغان حکومت اور طالبان کے درمیان تین ہفتے قبل امن مذاکرات شروع ہوئے تھے۔ تاہم یہ مذاکرات وسیع تر بات چیت کے ضابطہ اخلاق کے مسئلے پر تعطل کا شکار ہوگئے ہیں۔ افغانستان میں جنگ بندی اور مستقبل میں طرز حکومت جیسے موضوعات پر بھی ابھی کوئی بات چیت نہیں ہوئی ہے۔