بھارت : ہندو انتہا پسندوں نے مسلمان ڈرائیور کو وحشیانہ تشدد کرکے مار ڈالا

268

نئی دہلی : بھارت میں مسلمان ٹیکسی ڈرائیور کو قتل کرنے کی واردات ہوئی ہے، سواری کے روپ میں ہندو انتہا پسندوں نے آفتاب عالم کو جے شری رام کے نعرے لگانے اور شراب پینے پر بھی مجبور کیا۔

تفصیلات کے مطابق بھارت میں ہندو انتہا پسندوؤں نے مسلمانوں کا جینا دو بھر کردیا، مودی سرکار کی سرپرستی میں انتہا پسند ہندو مسلمانوں پر بے تحاشہ تشدد کرنے لگے، مسلمانوں پر نہ صرف تشدد کیا جاتا ہے بلکہ ان کے گھر بھی جلا دیئے جاتے ہیں اور ان کو علاقے سے بے دخل کر دیا جاتا ہے۔

ایک ایسا ہی واقعہ دہلی کے رہائشی مسلمان کیب ڈرائیور آفتاب عالم کے ساتھ بھی پیش آیا، آفتاب عالم دہلی سے سواری لے کے بلند شہر گیا تھا جہاں سے واپسی پر کچھ لوگ زبردستی اس کی گاڑی میں بیٹھ گئے اور مسلمان ہونے کی پاداش میں وحشیانہ تشدد کے بعد اس کا قتل کر دیا گیا۔

اس حوالے سے مقتول کے اہل خانہ کا کہنا ہے کہ ان کو مشتعل ہجوم نے قتل کیا ہے، قتل کرنے سے پہلے آفتاب پر جے شری رام کا نعرہ لگانے اور شراب پینے کا دباؤ ڈالا گیا تھا جبکہ پولیس اس بات کو ماننے کو تیار نہیں ہے۔

اہل خانہ کا یہ بھی کہنا ہے کہ یوپی پولیس کی جانب سے کیس میں شدت پسندی کے زاویے پر توجہ نہیں دی جا رہی ہے اور کچھ حقائق رپورٹ میں درج نہیں کیے گئے ہیں۔