ہینڈ سینیٹائزر بال ٹیمپرنگ کیلیے استعمال ہونے لگا

256

لندن: ہینڈ سینیٹائزر بال ٹیمپرنگ کے لیے بھی استعمال ہونے لگا،کاؤنٹی کرکٹ میں اسے گیند پر لگانے والے بولرمچ کلیڈن معطل ہوگئے۔

سسیکس نے 3 وکٹیں لینے کے باوجود سینئر کرکٹر کو اسکواڈ سے باہر کردیا، انگلش کرکٹ بورڈ نے بھی معاملے کی تحقیقات شروع کردیں۔ تفصیلات کے مطابق آئی سی سی نے گیند کو تھوک سے چمکانے پر پابندی عائد کی تو بولرز نے نت نئے طریقے ڈھونڈنا شروع کردیے، ان میں سسیکس کے مچ کلیڈن بھی شامل ہیں جنھیں گیند پر ہینڈ سینیٹائزر لگانے کے جرم میں معطل کردیا گیا،آسٹریلیا میں پیدا ہونے والے 37 سالہ رائٹ آرم میڈیم پیسر پر الزام ہے کہ انھوں نے گذشتہ ماہ مڈل سیکس سے میچ کے دوران ہینڈ سینیٹائزر استعمال کیا، وہ 3 وکٹیں لینے میں کامیاب رہے تھے۔

انگلینڈ اینڈ ویلز کرکٹ بورڈ نے بھی اس حوالے سے تحقیقات شروع کردی ہیں۔ سسیکس نے اعلامیے میں کہاکہ ای سی بی نے مچل کلیڈن کی جانب سے مڈل سیکس سے خمیچ میں گیند پر سینیٹائزر لگانے کے الزام کی تحقیقات شروع کردی ہیں، اس کا نتیجہ سامنے آنے تک ہم نے بولر کو معطل کردیا، فی الحال اس مرحلے پر ہم مزید کوئی تبصرہ نہیں کرسکتے۔