چین کے پاکستان میں گہرے اسٹریٹجک مفادات ہیں، امریکی رپورٹ

195

واشنگٹن: امریکی حکام کی ایک سرکاری رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ چین کے پاکستان میں گہرے اسٹریٹجک مفادات ہیں جو دونوں ممالک کو ممکنہ مسائل کے باوجود دوطرفہ آمادگی پر یکجا کیے ہوئے ہیں۔

چین میں ‘فوجی اور سلامتی ترقی’ کے بارے میں کانگریس کو پیش کردہ 2020 کی رپورٹ میں امریکی محکمہ دفاع نے بتایا کہ پاکستان ان چند ممالک میں شامل ہے جہاں بیجنگ ‘دوطرفہ اور کثیر جہتی’ تعلقات بڑھانا چاہتا ہے۔

ہفتے کے اوائل میں شائع ہونے والی اس رپورٹ میں کہا گیا کہ پاکستان ان ممالک میں شامل ہے جہاں چین نے ‘ممکنہ طور پر فوجی رسد کی سہولیات کے لیے جگہوں پر غور کیا ہے’۔

دوسری جانب چین اور پاکستان نے مفروضوں پر مبنی رپورٹ کو مسترد کردیا۔

پینٹاگون نے رپورٹ میں کہا کہ پاکستان بھی ان ممالک میں شامل ہے جہاں بیجنگ نے اپنے اسٹریٹجک مقاصد کے حصول کے لیے آپریشنل فوجی سرگرمیوں کا خاکہ پیش کرتے ہوئے’ مہمات’ کا ایک سلسلہ تیار کیا ہے۔

رپورٹ میں کہا گیا کہ مذکورہ عسکری مہمات کے ایک حصے کے طور پر چین کی جانب سے روس، پاکستان اور جنوب مشرقی ایشیائی ممالک کی تنظیم (آسیان) جیسی اقوام کے ساتھ ‘دوطرفہ اور کثیر الجہتی تعلقات میں اضافے’ کی کوشش ہے جو ‘مشترکہ آپریشنز کے انتظام کی صلاحیت کو بہتر بناسکتی ہے۔