ساڑھے 4 ارب روپے کی پینٹنگ خراب کرنے والے شخص کو جیل بھیج دیا گیا

232

برطانوی ریاست انگلینڈ کی ایک عدالت نے شہرہ آفاق مصور و پینٹر پابلو پکاسو کی نایاب پینٹنگ کو مکے مارکر پھاڑنے اور خراب کرنے والے ملزم کو جیل بھیج دیا۔

لندن کی ایک عدالت نے شکیل میسے نامی ملزم کو اعتراف جرم کے بعد 18 ماہ جیل کی سزا سنادی۔

ملزم نے گزشتہ برس دسمبر میں لندن میں واقع میوزیم ٹیٹ کی دیوار پر نصب تاریخی اور مشہور پینٹنگ (بسٹ آف اے وومن) کو مکے مارکر پھاڑا اور پھر اس کے کچھ ٹکڑے زمین پر گرادیے تھے۔

پولیس نے واقع ہونے کے بعد ملزم کو گرفتار کرکے ان کے خلاف فوجداری مقدمات کے تحت کارروائی کا آغاز کیا تھا۔

ابتدائی طور پر ملزم نے پولیس کو بتایا تھا کہ پنٹنگ کو مکے مارنے اور پھاڑنے کا عمل ان کی اداکاری کا حصہ ہے، تاہم بعد ازاں انہوں نے اپنے جرم کا اعتراف کیا تھا۔

دوران سماعت عدالت نے ملزم کے پینٹنگ پھاڑنے کے عمل کو سستی شہرت قرار دیتےہوئے انہیں جیل بھیج دیا۔