ایف 35 طیارے دینے کی مخالفت، یو اے ای نے اسرائیل سے طے شدہ ملاقات منسوخ کر دی

221

دبئی:متحدہ عرب امارات اور اسرائیل کے تعلقات تناؤ کا شکار ہو گئے، امریکہ اور امارات کے درمیان طیاروں کی ڈیل کی مخالفت کرنے پر یو اے ای نے اسرائیل سے طے شدہ باضابطہ ملاقات منسوخ کر دی۔

متحدہ عرب امارات، اسرائیل اور امریکی حکام میں ملاقات جمعہ کو ہونا تھی لیکن اس سے قبل اسرائیلی وزیراعظم نیتن یاہو نے امریکہ، یو اے ای ڈیل کی مخالفت کی۔ ٹرمپ انتظامیہ متحدہ عرب امارات کو ایف 35 جیٹ طیارے فروخت کرنے کی خواہشمند ہے۔ اس وقت مشرق وسطی میں صرف اسرائیل کے پاس ایف 35 جنگی طیارے ہیں۔

ایک امریکی دفاعی عہدیدار نے عرب امارات کے ساستھ طیارہ ڈیل 6 ماہ میں تکمیل پانے کا عندیہ دیا تھا۔ امریکہ نے ایف 35 طیارے اسرائیل کے علاوہ صرف اپنے مخصوص اتحادیوں جنوبی کوریا اور جاپان کو دیئے ہیں، اسرائیل عرب امارات کو یہ طیارے دینے کا مخالف ہے۔ اسرائیلی وزیراعظم نیتن یاہو کا کہنا تھا کہ امریکی وزیرخارجہ مائیک پومپیو کی جانب سے اس معاملے پر اسرائیلی تحفظات مدنظر رکھنے کی یقین دہانی کروائی گئی ہے۔

واضح رہے کہ امریکی ایف 35 طیارہ جدید ترین جنگی صلاحیت کے سبب امریکی فضائیہ کا اہم حصہ ہے، سٹھیلتھ ٹیکنالوجی اور عمودی پرواز کرنے کے علاوہ جدید راڈار اور الیکٹرانک وار فیئر سسٹم کے سبب اسے جنگوں میں فیصلہ کن کردار کا حامل سمجھا جاتا ہے۔