کانیے ویسٹ انتخابی دوڑ سے باہر

333

معروف امریکی ریپر، گلوکار، پروڈیوسر اور آنے والے امریکی صدارتی انتخابات کے آزاد امیدوار 43 سالہ کانیے ویسٹ کاغذات نامزدگی جمع کرانے میں 14 سیکنڈز کی تاخیر کی وجہ سے ایک ریاست میں انتخابی دوڑ سے باہر ہوگئے۔

کانیے ویسٹ نے گزشتہ ماہ 5 جولائی کو اچانک صدارتی انتخابات میں حصہ لینے کا اعلان کرکے سب کو حیران کردیا تھا۔

ماضی میں وہ ڈونلڈ ٹرمپ کے حمایتی رہے تھے تاہم اس بار انہوں نے ان کی حمایت ختم کرکے خود میدان میں اترنے کا فیصلہ کیا۔

کانیے ویسٹ نے گزشتہ ماہ 16 جولائی کو سب سے پہلے ریاست اوکلاہاما سے نامزدگی فارم حاصل کیے تھے۔

جس کے چند دن بعد انہوں نے ریاست جنوبی کیرولینا کے چارلسٹن شہر سے 20 جولائی کو انتخابی مہم کا آغاز کیا تھا۔

ریاست یوٹاہ سے قبل کانیے ویسٹ نے اوکلاہاما، آرکنساس اور کولاراڈو سے بھی نامزدگی فارم حاصل کرلیے ہیں اور خیال کیا جا رہا تھا کہ وہ مزید چند ریاستوں سے نامزدگی فارم حاصل کرنے میں کامیاب ہو جائیں گے۔

تاہم رواں ماہ کے اوائل میں ریاستی الیکشن کمیشن میں ووٹرز کے ایک گروپ کی جانب سے دائر کی گئی درخواست میں الزام لگایا تھا کہ کانیے ویسٹ کی انتخابی کی مہم کے ورکرز 4 اگست کو آزاد صدارتی امیدوار کی نامزدگی کے آخری روز وسکونسن کے 2 ہزار ووٹرز کے مطلوبہ 2 ہزار دستخط جمع کرانے کے لیے شام 5 بجے کی ڈیڈلائن پر پورا نہیں اترے تھے۔