بیروت دھماکے: حزب اللہ نے اسرائیل پر حملے کی دھمکی دے دی

191

حزب اللہ نے بیروت دھماکوں میں اسرائیل کے ملوث ہونے کی صورت میں اس پر حملے کی دھمکی دے دی۔

عرب خبر رساں ادارے کےمطابق حزب اللہ کے سربراہ حسن نصر اللہ نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ ان کی تنظیم بیروت دھماکوں کی تحقیقات کے نتیجے کا انتظار کرے گی اور اگر اس تخریب کاری میں اسرائیل ملوث ہوا تو اسے اس کے برابر ہی قیمت ادا کرنا پڑے گی۔

انہوں نےکہا کہ بیروت دھماکوں سے متعلق دو نظریات زیر تفتیش ہیں کہ یہ ایک حادثہ ہے یا امیونیم نائٹریٹ کو وجہ بنا کر تخریب کاری کی گئی ہے۔

حسن نصر اللہ نے مطالبہ کیا کہ لبنان میں روایتی سیاسی جماعتوں کے ذریعے نئی حکومت کا قیام عمل میں لایا جائے۔

واضح ہے کہ 4 اگست کو بیروت کے ساحلی پورٹ پر ہونے والے خوفناک دھماکوں میں 172 افراد ہلاک اور 6 ہزار سے زائد زخمی ہوئے جب کہ اسرائیل نے ان دھماکوں میں ملوث ہونے سے مکمل لاتعلق کا اعلان کیا ہے۔

بیروت دھماکوں کے بعد لبنانی وزیراعظم نے اسے غفلت اور کرپشن قرار دیتے ہوئے استعفیٰ دے دیا اور ان کی پوری کابینہ بھی مستعفی ہوچکی ہے۔