مقبوضہ کشمیر سے متعلق حدیقہ کیانی کا گانا یوٹیوب سے ہٹائے جانے کے بعد دوبارہ ریلیز

241

کاپی رائٹس اور دیگر کی بنا پر یوٹیوب کی جانب سے معروف گلوکارہ و موسیقار حدیقہ کیانی اور ترکی کے گلوکاروں علی ٹولگا ڈیمرٹاس اور ٹورگی ایورین کے ہٹائے گئے گانے کو دوبارہ ریلیز کردیا گیا۔

ابتدائی طور پر حدیقہ کیانی اور ترک گلوکاروں کے گانے کو 13 جولائی کو ‘کشمیر سیویتاس’ نامی تنظیم اور حدیقہ کیانی کے یوٹیوب چینل پر ریلیز کیا گیا تھا۔

مگر چند ہی گھنٹوں بعد یوٹیوب انتظامیہ نے گانوں کو دونوں چینلز سے ہٹادیا تھا، جس کی اطلاع حدیقہ کیانی نے بھی دی تھی۔

یوٹیوب کی جانب سے حدیقہ کیانی کے چینل سے ویڈیو کو کاپی رائٹس کے تحت ہٹائے جانے کا دعویٰ کیا گیا تھا جب کہ کشیمیری سیویتاس کے چینل سے ویڈیو کو ہٹائے جانے پر پیغام آرہا تھا کہ مذکورہ ویڈیو نجی کردی گئی۔

مذکورہ گانے کو حدیقہ کیانی نے ترک گلوکاروں کے ساتھ ‘کشمیر سیویتاس’ نامی تنظیم کی مدد سے ان شہدا کو خراج عقیدت پیش کرنے کے لیے جاری کیا تھا، جن میں 13 جولائی 1931 کو ڈوگرا بادشاہ کی جانب سے کشمیر میں شہید کیے گئے 22 افراد اور 15 جولائی 2016 کو ترکی میں فوجی بغاوت کو ناکام بنانے کے دوران جان کا نذرانہ دینے والے افراد شامل ہیں۔