امریکہ میں جشن آزادی کی تقریبات کے بعد کورونا پھر سر اٹھانے لگا،کیسز بڑھ گئے

190

واشنگٹن: امریکا میں جشن آزادی کی تقریبات کے بعد کرونا وائرس کے کیسز میں مزید اضافہ ہو گیا ہے۔

امریکی میڈیا کے مطابق جشن آزادی کی تقریبات کے بعد ملک میں وبا کی صورت حال مزید خراب ہو گئی ہے، صرف ریاست فلوریڈا میں آج 10 ہزار کرونا کیسز رپورٹ ہوئے۔

ایریزونا، ٹیکساس، جنوبی کیرولینا سمیت متعدد امریکی ریاستوں میں کو وِڈ نائنٹین کے کیسز میں اضافہ ہو گیا ہے، ایریزونا کے گورنر نے وفاق سے 500 ڈاکٹرز اور میڈیکل اسٹاف کی مدد بھی طلب کرلی، ان کا کہنا تھا کہ ریاست میں صرف 156 مزید مریضوں کو آئی سی یو میں رکھنے کی گنجائش رہ گئی ہے۔

خیال رہے کہ جشن آزادی کی تقریبات میں امریکیوں نے احتیاطی تدابیر کو ہوا میں اڑا دیا تھا، جس کے باعث 34 ریاستوں میں کرونا کیسز کے پریشان کن اعداد و شمار سامنے آئے ہیں، ادھر امریکی میڈیا کا کہنا ہے کہ ملک بھر میں روزانہ کی بنیاد پر 45 ہزار سے زائد کرونا کیسز رپورٹ ہو رہے ہیں۔

امریکا میں کرونا کیسز کی تعداد 30 لاکھ کے قریب پہنچ چکی ہے، جب کہ وائرس سے اب تک 1 لاکھ 32 ہزار 569 مریض ہلاک ہو چکے ہیں۔

کرونا وائرس سے امریکا سب سے زیادہ متاثرہ ملک ہے، امریکا میں کو وِڈ نائنٹین سے متاثر 12 لاکھ 89 ہزار سے زائد مریض صحت یاب بھی ہو چکے ہیں، تاہم اب بھی 16 ہزار مریضوں کی حالت تشویش ناک ہے۔ امریکا میں نیویارک شہر سب سے زیادہ متاثر ہوا جہاں 32,248 ہلاکتیں ہوئیں اور 4 لاکھ 22 ہزار سے زائد لوگ متاثر ہوئے۔

ادھر امریکی یوم آزادی پر سیاہ فام امریکی جارج فلائیڈ کے قتل کے خلاف مظاہرہ کرنے والے شرکا نے ریاست میری لینڈ اور کنیکٹی کٹ میں امریکیوں کی سفید فام بالا دستی کی یادگار، امریکا دریافت کرنے والے مشہور جہاز راں کرسٹوفر کولمبس کے مجسمے گرائے اور ایک مجسمے کا سر بھی کاٹا گیا۔