امریکا میں لوگوں کو گاڑی تلے کچلنے والے ملزم سے متعلق نیا انکشاف

57

امریکی ریاست وسکانسن میں لوگوں کوگاڑی سےکچلنے والے شخص سے متعلق انکشاف ہوا ہے کہ ملزم  گھر میں جھگڑا کرکے نکلا تھا اور واقعے کا دہشتگردی سے تعلق نہیں۔

پولیس کی جانب سے جاری بیان سے پہلے دائیں بازو کے انتہاپسندوں نے دعویٰ کیا تھاکہ وسکانسن میں لوگوں کوگاڑی سے کچلنے والا سیاہ فام ہے اور اس نےکائلی ریٹن ہاؤس کوبری کیےجانے کے ردعمل میں سفیدفام لوگوں کوکچل کرہلاک کیاہے۔

ڈونلڈ ٹرمپ کے بیٹے نے شواہد دیکھے بغیر ہی ٹوئٹ  کردی تھی کہ لوگوں کوکچلنے والاشخص دہشتگرد ہے۔

پولیس کی جانب سے واقعے کو دہشتگردی قرار نہیں دیا گیا ہے اور پولیس کا کہنا ہےکہ ملزم ڈیرل ایڈورڈ کو تحقیقات میں مزید الزامات کا سامنا کرنا پڑسکتا ہے۔

پولیس کے مطابق واقعے میں 52 سے 81 سال تک کے افراد ہلاک ہوئے جب کہ زخمیوں میں اسکول کے بچے اور بزرگ بھی شامل ہیں جو اسپتال میں زیر علاج ہیں۔