دلی میں فضائی آلودگی، اسکول اور سرکاری دفاترایک ہفتے کے لیے بند

77

بھارتی دارالحکومت نئی دلی میں فضائی آلودگی قابو سے باہرہوگئی۔ وزیر اعلی اروند کیجری وال نے پیر سے صوبے بھر میں دارلحکومت میں اسکول اور سرکاری دفاتر ایک ہفتے تک بند کرنے کا اعلان کردیا ہے۔انڈیا ٹوڈے کے مطابق وزیر اعلی اروند کیجری وال نے سیکریٹیریٹ میں ہنگامی اجلاس کے بعد میڈیا سے گفت گو کرتے ہوئے کہا کہ اسکول بند کرنے کا فیصلہ اس بات کو یقینی بنانے کے لیے کیا گیا ہے تاکہ بچے مضرصحت ہوا میں سانس نہ لیں۔وزیر اعلی نے پیر سے دارلحکومت میں ایک ہفتے تک اسکول بند کرنے کا اعلان کردیا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ سرکاری ملازمین ایک ہفتے تک گھروں سے کام کریں گے جب کہ انہوں نے نجی دفاتر سے بھی یکساں پروٹوکول پر عمل درآمد کرنے کی تجویز پیش کی ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ دہلی سرکار دارلحکومت میں لاک ڈاؤن لگانے کی تجویز پر بھی کام کر رہی ہے اور اسے سپریم کورٹ میں بھی پیش کیا جائے گا۔آج ہونے والے اجلاس میں وزیر اعلی نے دہلی میں بڑھتی ہوئی آلودگی کے سد باب کے لیے اجتماعی طور پر کام کرنے کے ساتھ 14 سے 17 نومبر تک تعمیراتی سرگرمیوں پر بھی پابندی عائد کردی ہے۔ جب کہ گزشتہ روز سینٹرل پلوشن کنٹرول بورڈ( سی پی سی بی) نے دہلی میں قائم حکومتی اور نجی دفاتر کو گاڑیوں کے استعمال میں کم از کم 30 فیصد تک کمی کرنے کا مشورہ دیا تھا۔ پلوشن باڈی نے شہر میں فضائی آلودگی میں کمی کے لیے آؤٹ ڈور سرگرمیوں کو محدود کرنے کے لیے ایک ہدایت نامہ بھی جاری کیا تھا۔