عمر شریف کی میت منگل کو پاکستان لائے جانے کا امکان

283

ٍکراچی: گزشتہ روز جرمنی میں انتقال کرجانے والے لیجنڈ کامیڈین عمر شریف کا جسد خاکی منگل کو پاکستان لائے جانے کا امکان ہے۔

لیجنڈ کامیڈین عمر شریف کا جسد خاکی پاکستان لانے اور ان کی تدفین کے حوالے سے حکومتی سطح پر کوششیں کی جارہی ہیں, جرمنی میں پاکستان کے سفارت خانے کا عمر شریف کے ہمراہ علاج کے لیے جانے والی ان کی اہلیہ سے  مسلسل رابطہ ہے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق حکومتی سطح پر کوششیں کی جارہی ہیں کہ میت کو منتقلی کے حوالے سے پیر سے باقاعدہ کاغذی کارروائی شروع کی جائے گی اور امید ہے کہ ان کی میت منگل کو کراچی پہنچے گی۔

مرحوم عمر شریف کے بیٹے نے میڈیا کو بتایا تھا کہ عمر شریف کی خواہش تھی کہ انہیں حضرت عبداللہ شاہ غازی رحمۃ اللہ تعالیٰ کے مزار کے احاطے میں دفن کیا جائے، جب کہ ان کی اہلیہ زریں غزل نے جید عالم دین مفتی تقی عثمانی سے درخواست کی ہے کہ وہ عمر شریف کی نماز جنازہ پڑھائیں۔ سندھ حکومت نے بھی کہا ہے کہ مرحوم اور ان کے اہل خانہ کی خواہش کا احترام کیا جائے گا۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق محکمہ اوقاف سندھ نے عمر شریف کی قبر کے لیے قائد اعظم محمد علی جناح کی چھوٹی بہن شیریں جناح کی قبر کے برابر جگہ کا انتخاب کیا ہے، جس کے نزدیک مزار کے اندر بہنے والا چشمہ بھی ہے۔ عمر شریف کا جسد خاکی کراچی آنے کے بعد نمازہ جنازہ اور تدفین کا اعلان کیا جائے گا۔

عمر شریف کے کاندانی ذرائع کا کہنا ہے کہ عمر شریف کا جسد خاکی گلشن اقبال میں ان کے سسرال والے گھر لایا جائے گا جب کہ نماز جنازہ کلفٹن میں واقع عمر شریف پارک میں اداکی جائے گی، معروف سماجی ادارے سیلانی ویلفیئر کے بشیر فاروقی نماز جنازہ پڑھائیں گے۔