گوگل نے دھندلی تصاویر کو واضح کرنے والی ٹیکنالوجی پیش کردی

156

کیلیفورنیا: اب تک ہم نے سادی تصاویر کو مصنوعی ذہانت (اے آئی) کی مدد سے متحرک کرکے دیکھا ہے۔ اگلے مرحلے میں گوگل نے انتہائی بھدی اور کم وضاحتی (لوریزولوشن) تصاویر کو واضح اور بلند معیاردینے کا کامیاب تجربہ کیا ہے۔ یہاں تک کہ بعض تصاویر میں آنکھیں اور دیگر نقوش غائب ہیں لیکن گوگل الگورتھم نے اسے بڑی خوبصورتی سے مکمل کردکھایا ہے۔

گوگل نے اپنے بلاگ میں اس ٹیکنالوجی کی تفصیلات اور بعض تصویری مثالیں دی ہیں۔ گوگل میں اے آئی کا ایک الگ سے شعبہ ہے جو کئی میدانوں میں متحرک ہے۔ اس نئی ٹیکنالوجی کو ’ہائی فائڈیلٹی امیج جنریشن یوزنگ ڈیفیوژن ماڈل‘ کا نام دیا گیا ہے۔ اس کی بدولت اہلِ خانہ کی پرانی اور دانے دار تصاویر کو بالکل نیا کیا جاسکتا ہے۔

اسی ٹیکنالوجی کو سی سی ٹی وی کی ویڈیوز اور تصاویر واضح کرنے کے لیے بھی استعمال کیا جاسکتا ہے۔ دوسری جانب طبی عکس نگاری کے معیار کو بڑھا کر مرض کی شناخت اور مریضوں کی جان بچانے میں بہت مدد مل سکے گی۔ ڈیفیوژن ماڈل سے صرف چند سیکنڈوں میں تصویر واضح، صاف اور بلند وضاحتی ہوجاتی ہے۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.