اقوام متحدہ کا طالبان کیلئے نرم گوشہ، دہشت گردوں کی فہرست میں نام بدستور برقرار

44

اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل نے خاموشی سے اپنے بیانات سے لفظ ‘طالبان’ خارج کرتے ہوئے ان گروپوں کے نام بتائے ہیں جو افغانستان سے سرگرم دہشت گردوں کی حمایت کرتے ہیں۔

16 اگست کو سلامتی کونسل نے اپنے بیان میں ‘افغانستان میں دہشت گردی کے خلاف جنگ کی اہمیت کے عزم کا اعادہ کرتے ہوئے کہا تھا کہ اس بات کو یقینی بنایا جائے کہ افغانستان کی سرزمین کسی ملک کو دھمکی دینے یا حملے کے لیے استعمال نہ کی جائے’۔

بیان میں یہ بھی کہا گیا کہ ‘طالبان اور نہ کسی دوسرے افغان گروپ یا فرد کو کسی ملک کی سرزمین سے دہشت گردانہ کارروائیوں کی حمایت کرنی چاہیے’۔

27 اگست کو کابل ایئرپورٹ پر دھماکے کے بعد یو این ایس سی نے اپنے ابتدائی بیان میں ایک پیراگراف دوبارہ شامل کیا تھا، لیکن اس سے لفظ طالبان حذف کردیا گیا تھا۔

سلامتی کونسل کے اراکین نے افغانستان میں دہشت گردی کے خلاف لڑائی کی اہمیت پر زور دیتے ہوئے کہا تھا کہ اس بات کو یقینی بنانا ضروری ہے کہ افغانستان کی سرزمین کسی بھی ملک کو دھمکانے یا حملے کے لیے استعمال نہیں ہونی چاہیے، نہ ہی کسی افغان گروپ یا فرد کو کسی بھی ملک میں سرگرم دہشت گردوں کی حمایت کرنی چاہیے۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.