گوگل نے تھرڈ پارٹی سائن ان کو مزید آسان بنا دیا

260

سلیکان و یلی: گوگل نے اپنے صارفین کی ایک اور دیرینہ مشکل کا آسان حل پیش کردیا ہے۔ 

ہم میں سے بیشتر افراد نے کسی نئی ایپلی کیشن میں لاگ ان ہونے کے لیے تھرڈ پارٹی سائن ان کا آپشن ضرور استعمال کیا ہوگا، جس میں صارفین کو ہر ایپ کے لیے پاس ورڈ یاد رکھنے کی جھنجھٹ سے بچنے کے لیے ای میل ایڈریس، فیس بک یا ٹوئٹر اکاونٹ سے لاگ ان ہونے کا آپشن دیا جاتا ہے۔ لیکن کچھ صارفین کے لیے تھرڈ پارٹی ایپلی کیشن میں سائن ان کا طریقہ کار زیادہ مشکل بن جاتا ہے لیکن اب گوگل نے اپنے صارفین کی اس پیچیدہ مشکل کو مزید سہل بنا دیا ہے۔

ٹیکنالوجی ویب سائٹ نائن ٹو فائیو گوگل میں شائع ہونے والی رپورٹ کے مطابق گوگل نے اس طریقہ کار میں مزید بہتری کرکے سائن ان کے تجربے کو نہایت آسان کردیا ہے۔ ٹیکنالوجی جائنٹ نے ‘گوگل آئڈینٹیٹی سروسز” کے نام سے متعارف کرانے والے اپنے ماڈیول میں ” ون ٹیپ آتھینٹی کیشن ” کا اضافہ کردیا ہے، جس کی بدولت تھرڈ پارٹ ایپلی کیشن میں سائن ان کا طریقہ بہت آسان ہوگیا ہے۔

یہ نیا طریقہ براہ راست موجودہ ویب سائٹس پر کام کرے گا اور استعمال کنندہ علحیدہ سے سائن ان پیچ پر ری ڈائریکٹ( منتقل) نہیں ہوگا۔ اس نئے فیچر کا مقصد استعمال کنندگان کے برائوزنگ کے تجربے کو کسی مشکل کے بنا رواں بنانا ہے۔

رپورٹ کے مطابق یہ فیچر اینڈروئیڈ فون صارفین کے لیے بھی دست یاب ہوگا اور اینڈروئیڈ صارفین کے موبائل پر “ون ٹیپ پرومپٹ” ظاہر ہوگا، جب کہ ڈیسک ٹاپ صارفین اسے سیدھی طرف اوپر دیکھ سکیں گے۔