پیرس میں کیوبا کے سفارتخانے پر دستی بموں سے حملہ

224

فرانس کے دارالحکومت پییرس میں کیوبا کے سفارتخانے پر دستی بموں سے حملہ کیا گیا ہے۔

کیوبا کی وزیر خارجہ کے پیرس میں کیوبا  کے سفارت خانے پرفرانسیسی مظاہرین نے  گیسولین بموں سے حملہ کردیا ہے۔

تاہم کیوبا کے وزیر خارجہ نے اپنے ٹویٹر پر سفارتخانے پر حملے سے متعلق   تفصیلات بتاتے ہوئے بتایا کہ سفارتخانے پر مظاہرین نے تین مولوٹوف کاک ٹیل پھینکے جن میں سے دو سفارت خانے سےٹکرائے جس کے باعث آگ لگ گئی۔

کیوبا کے بین الاقوامی پریس سینٹر نے امریکہ کو اس حملے کا ذمہ دار ٹھہرایا ہے۔

برونو روڈریگ نے اپنے ٹوئٹر پیغام  میں کہا کہ امریکہ ہمارے ملک کے خلاف مسلسل مہم چلا رہا ہے جو ان رویوں کی حوصلہ افزائی کرتی ہے اور تشدد کے کو فروغ دیتی ہے۔

فرانس میں کورونا وبا کے پھیلاؤ کو روکنے کے لیے فرانس کے صدر میکوؤل نے ویکسین لگوانا لازمی قرار دیا ہے۔ فرانس میں کورونا لاک داؤن کے سبب بےروزگاری اور مہنگائی میں اضافہ ہوا ہے جبکہ کھانے پینے کی اشیا کی قلت پیدا ہوگئی ہے، جس کے خلاف لوگ پچھلے ایک ہفتے سے مظاہرے کررہے ہیں۔