بوسہ دے کر کورونا کا علاج کرنیوالا شخص خود کورونا وائرس سے ہلاک

303

کورونا وائرس کی ابھی تک کوئی ویکسین تیار نہیں کیا جا سکی لیکن ٹوٹکوں کے ذریعے اس کے علاج کے دعوے مسلسل سامنے آ رہے ہیں۔

دنیا بھر میں مہلک وبا کورونا وائرس سے بچنے کے لیے  کہیں جراثیم کش اور ماسک کا استعمال کیا جا رہا ہے تو کہیں لوگ وائرس کو ماننے سے ہی انکار کر رہے ہیں۔

حال ہی میں بھارتی ریاست مدھیا پردیش کے شہر رتلام سے تعلق رکھنے والے اسلم نامی شخص نے یہ دعویٰ کیاتھا کہ وہ اگر کسی بھی شخص کو اس کے ہاتھ پر بوسہ دیں گے تو وہ ہربیماری بشمول کورونا سے محفوظ رہے گا۔

بھارتی میڈیا کے مطابق ہاتھوں پر بوسہ دے کر کورونا وائرس کا علاج کرنے والا اسلم خود بھی وائرس سے متاثر ہو گیا اور اگلے ہی روز اس کی موت بھی واقع ہو گئی۔

رتلام کے حکام نے واقعے کے بعد ان تمام لوگوں کو بھی تلاش کیا جو اسلم سے رابطے میں تھے یا اس کے پاس علاج کی غرض سے آئے تھے۔

حکام کے مطابق اسلم کے پاس جانے والے 40 افراد میں سے 20 افراد کا کورونا وائرس کا ٹیسٹ مثبت آیا۔