قدرتی آنکھ جیسی دنیا کی پہلی مصنوعی ’’تھری ڈی‘‘ آنکھ تیار

398

ہانگ کانگ: ہانگ کانگ یونیورسٹی آف سائنس اینڈ ٹیکنالوجی کے سائنسدانوں نے ایسی مصنوعی تھری ڈی آنکھ بنا لی ہے جو قدرتی آنکھ جیسی گول ہے، اسے ’’الیکٹروکیمیکل آئی‘‘ کا نام دیا ہے۔

رپورٹ کے مطابق اس سے پہلے تک مصنوعی آنکھ کے جتنے نمونے تیار کئے گئے ان سب میں سپاٹ ڈیجیٹل کیمروں کا استعمال کیا جاتا ہے۔ یہ پہلی مصنوعی آنکھ ہے جو کئی طرح کے پیچیدہ حصوں کو گولائی میں ترتیب دے کر ایجاد کی گئی ، بالکل اسی طرح جیسے قدرتی آنکھ ہوتی ہے۔

اس مصنوعی آنکھ کی سب سے اہم خاصیت اس میں قدرتی آنکھ کی طرح اعصاب کا گچھا ہے جو حقیقی آنکھ کی طرح دماغ تک پہنچتے ہیں اور منظر کے سگنلز کا احساس پیدا کرتے ہیں، اس مصنوعی آنکھ میں مائع دھات سے بنائے گئے اعصاب ہیں جو منظر کا ڈیٹا سکرین تک پہنچاتے ہیں۔

فی الحال اس آنکھ سے حاصل ہونے والا عکس خاصا دھندلا ہے لیکن اسے تیار کرنے والے ماہرین اسے مزید بہتر بنانے میں لگے ہوئے ہیں۔ اس آنکھ سے دیکھے جانے والے منظر کی تفصیلات کا دارومدار اس سے منسلک مائع دھات کے اعصاب کی تعداد پر ہے، وہ جتنے زیادہ ہوں گے منظر اتنا واضح ہو گا۔

ماہرین کا خیال ہے کہ ایک وقت ایسا آئے گا جب اس مصنوعی آنکھ سے دیکھا گیا منظر قدرتی آنکھ سے بھی بہتر ہو جائے گا، اس دعوے میں کتنی سچائی ہے یہ تو وقت ہی بتائے گا۔