سابق امریکی صدر کی بدنام شہرت،رونالڈو کو ٹرمپ ٹاورمیں اپارٹمنٹ بیچنا مشکل

108

نیویارک: دنیائے فٹبال کے ممتاز کھلاڑی کرسٹیانو رونالڈو ان دنوں عجیب مشکل میں پھنسے ہوئے ہیں، وہ یہ کہ انھیں نیویارک میں واقع ٹرمپ ٹاور میں موجود اپنا اپارٹمنٹ اچھے داموں میں بیچنا مشکل ہو چکا ہے۔ معاشی ماہرین اس کی وجہ سابق صدر کی بدنام شہرت کو قرار دے رہیں۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق صورتحال اس قدر عجیب ہو چکی ہے کہ کرسٹیانو رونالڈو اس اپارٹمنٹ کو نصف قیمت پر بھی بیچنے کو تیار ہیں لیکن انھیں کوئی خریدار نہیں مل رہا

اس سے قبل قرار دیا جا رہا تھا کہ اس اپارٹمنٹ کا فرنیچر بہت بھاری ہے، اس لئے خریدار اس میں کم دلچسپی لے رہے ہیں تاہم بروکرز نے ان افواہوں کو رد کرتے ہوئے کہا ہے کہ رونالڈو کو اپارٹمنٹ نہ بکنے کی وجہ کوئی اور نہیں سابق صدر ڈونلڈ ٹرمپ خود ہیں۔

خیال رہے کہ پرتگال کے سٹار فٹبالر کرسٹیانو رونالڈو کے اس اپارٹمنٹ کو معروف ڈیزائنر جان پیبلو مولینیکس نے خوبصورتی سے مزین کیا تھا۔ اب خبریں ہیں کہ کوشش کی جار ہی کہ کہ کوئی خریدار مل جائے تاکہ یہ اپارٹمنٹ اسے اونے پونے داموں دے دیا جائے۔

غیر ملکی میڈیا کا کہنا ہے کہ رونالڈو اس اپارٹمنٹ سے اس قدر اکتا چکے ہیں کہ وہ اسے 10 ملین ڈالر کے نقصان میں بھی فروخت کرنے کو تیار ہیں۔

رونالڈو نے یہ اپارٹمنٹ 2015ء میں خریدا تھا۔ اس وقت 2 ہزار 500 مربع فٹ کے اس اپارٹمنٹ کیلئے انہوں نے اٹھارہ اعشاریہ پانچ ملین کی خطیر رقم خرچ کی تھی۔

اس اپارٹمنٹ میں تین بیڈ رومز ہیں جہاں سے نیویارک کے سینٹرل پارک کا 360 ڈگری زاویے سے نظارہ کیا جا سکتا ہے۔

حالیہ جاری ہونے والی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ نیویارک کے علاقے مین ہٹن میں واقع یہ ٹرمپ ٹاور اپنے مالک کے اقتدار سنبھالنے کے بعد سے بیس فیصد سے زیادہ قدر کھو چکا ہے۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.