شائقین کی بے چینی اور ابوظہبی کا پارہ عروج پر پہنچنے لگا

132

 لاہور:  پی ایس ایل 6 شروع ہونے سے قبل شائقین کی بے چینی اور ابوظہبی کا پارہ عروج پر پہنچنے لگا۔

انتظامی مشکلات کا ایک طویل سلسلہ ختم ہونے کے بعد بالآخر پی ایس ایل کے باقی میچز کا بدھ کو آغاز ہورہا ہے،غیر یقینی کے بادل چھٹنے کے بعد کھلاڑی ابوظبی کے موسم کی سختیاں برداشت کرتے ہوئے بیٹ اور بال کی جنگ جیتنے کیلیے تیاریاں کررہے ہیں،شائقین سنسنی خیز مقابلے دیکھنے کیلیے بے تاب ہیں۔

ایک طرف ٹی ٹوئنٹی کرکٹ کی گرمجوشی نظر آئے گی تو دوسری طرف عرب صحراؤں کی روایتی تپش بھی کرکٹرز کا حوصلہ آزما رہی ہوگی،یواے ای میں موسم کی پیشگوئی کے مطابق رواں ہفتے پارہ عروج پر ہوگا، گذشتہ روز ابوظبی میں درجہ حرارت 46 کے قریب تھا جس کے آئندہ چند روز میں 51.8 تک پہنچنے کا امکان ظاہر کیا گیا ہے۔ اس دوران ساحلی شہروں میں حبس بھی 90فیصد تک ہوگا۔

پاکستان میں کورونا کیسز بڑھنے پر پی سی بی نے مجبوری میں پی ایس ایل کی یواے ای میں میزبانی کا فیصلہ تو کرلیا مگر روایتی طور پر اس ماہ میں وہاں کرکٹ نہیں ہوتی،قرنطینہ کی وجہ سے کرکٹرز کو میدان میں ٹریننگ کیلیے زیادہ دن نہیں ملے،اس لیے جسم میں پانی کی کمی کے سبب ہونے فٹنس مسائل کا خدشہ موجود رہے گا، خاص طور پر اپنے ملکوں میں سردموسم سے آنے والے غیر ملکی کھلاڑیوں کو زیادہ پریشانی اٹھانا پڑ سکتی ہے۔