فیس بک میں اب کووڈ کو انسانوں کا تیار کردہ قرار دینے کی پوسٹس کی اجازت

298

فیس بک نے حالیہ دنوں میں گمراہ کن مواد کے حوالے سے اپنی پالیسیوں میں چند نمایاں تبدیلیاں کی ہیں۔

ان میں سب سے اہم تبدیلی یہ ہے کہ اب صارفین ان دعوؤں کو شیئر کرسکیں گے کہ نیا کورونا وائرس انسانوں کا تیار کردہ ہے۔

فیس بک کے ایک ترجمان کے مطابق ‘کووڈ کے ماخذ کے حوالے سے جاری تحقیقات کے مدنظر اور عوامی طبی ماہرین سے مشاورت کے بعد ہم نے اپنی ایپس سے اس دعویٰ پر مبنی پوسٹس کو نہ ہٹانے کا فیصلہ کیا ہے’۔

ترجمان کا کہنا تھا کہ ہم طبی ماہرین کے ساتھ مل کر وبا کے ارتقا کے حوالے سے کام جاری رکھیں گے اور مسلسل اپنی پالیسیوں کو نئے حقائق کے مطابق بدلتے رہیں گے۔

فیس بک کی جانب سے پالیسیوں میں تبدیلیاں اس وقت کی گئی ہیں جب مختلف ممالک میں تحقیقاتی رپورٹس میں اس خیال کو درست کیا جارہا ہے کہ یہ وائرس کسی لیب سے لیک ہوا۔

حال ہی میں امریکی صدر جو بائیڈن نے ایجنسیوں کو یہ تحقیقات کرنے کا حکم دیا تھا کہ وائرس چین کے شہر ووہان کی کسی لیب سے تو لیک نہیں ہوا۔

انہوں نے کہا کہ ایسا ممکن بھی ہوسکتا ہے۔