براڈ پٹ سابق اہلیہ انجلینا جولی سے بچوں کی حوالگی کا کیس جیت گئے

251

امریکی عدالت نے ہولی وڈ اداکار براٹ پٹ اور ان کی سابق اہلیہ انجلینا جولی کے درمیان گود لیے بچوں کی حوالگی کے کیس میں 5 سال بعد براڈ پٹ کے حق میں فیصلہ سنا دیا۔

دونوں کے درمیان 6 بچوں کی حوالگی کا کیس 2016 سے زیر سماعت تھا اور ان کا کیس کم از کم 4 مختلف عدالتوں میں چلا۔

دونوں کے درمیان یہ کیس اس وقت شروع ہوا تھا جب کہ 2016 میں انجلینا جولی نے دعویٰ کیا تھا کہ براڈ پٹ نے ان کے بڑے بیٹے 19 سالہ میڈوکس کو طیارے میں سفر کے دوران مارا۔

مذکورہ واقعے کے بعد انجلینا جولی نے براڈ پٹ سے علیحدگی اختیار کرکے طلاق کے لیے درخواست دائر کردی تھی اور ریاست کیلی فورنیا کی عدالت نے اپریل 2019 میں ان کی طلاق کے فیصلے میں دونوں کو ’غیر شادی شدہ‘ قرار دیا تھا۔

اگرچہ تاحال ان کی باضابطہ طلاق نہیں ہوئی مگر عدالت کی جانب سے انہیں نئی زندگی شروع کرنے کے لیے ’طلاق یافتہ‘ قرار دیا گیا تھا مگر باضابطہ طور پر ان کی طلاق کے معاملات تاحال طے نہیں پائے۔