ماؤنٹ ایورسٹ پر 100 کوہ پیما کورونا وائرس سے متاثر

292

آسٹریا سے تعلق رکھنے والے کوہ پیمائی کے ماہر گائیڈ لوکاس فرٹنبیچ نے کہا ہے کہ ماؤنٹ ایورسٹ پر کورونا وائرس پھیلنے سے کوہ پیما اور مددگار عملے کے ارکان سمیت کم از کم 100 افراد متاثر ہوئے ہیں۔

امریکی خبر رساں ادارے اے پی کے مطابق یہ دنیا کی بلند ترین چوٹی پر کووڈ 19 کی موجودگی کے حوالے سے پہلا جامع بیان ہے۔ خیال رہے کہ نیپال کے سرکاری عہدیدار یہاں پر کورونا وائرس کی موجودگی سے انکار کرتے رہے ہیں۔

آسٹریا کے لوکاس فرٹنبیچ وہ پہلے معروف کوہ پیما گائیڈ ہیں جنہوں نے گزشتہ ہفتے کورونا وائرس کے خدشات کے سبب ایورسٹ کی اپنی مہم روک دی تھی۔ انہوں نے کہا ان کے ایک غیر ملکی گائیڈ اور 6 نیپالی شرپا گائیڈز کا کورونا ٹیسٹ مثبت آیا ہے۔

لوکاس نے اے پی سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ میرا خیال ہے کہ اب تک ریسکیو پائلٹس، انشورنس عہدیداروں، کوہ پیمائی مہم کے گائیڈز اور ڈاکٹروں سے تمام کیسز کی تصدیق ہوئی ہے۔ میرے پاس پازٹیو ٹیسٹ رپورٹس ہیں، اس لیے ہم یہ ثابت کر سکتے ہیں۔

انہوں نے کہا ہمارے پاس بیس کیمپ میں کم سے کم 100 افراد کورونا پازٹیو ہیں اور یہ تعداد 150 یا 200 تک ہو سکتی ہے۔ یہ بات واضح ہے ایورسٹ بیس کیمپ میں بہت سے کووڈ کیسز موجود تھے۔ مجھے دکھائی دے رہا تھا کہ لوگ بیمار ہیں، ان کے خیموں سے کھانسنے کی آوازیں صاف سنائی دے رہی تھیں۔