غزہ پر اسرائیلی حملے جاری، مزید 24 فلسطینی جاں بحق، تعداد 212 ہو گئی

271

غزہ پر اسرائیلی بربریت جاری ہے، صیہونی فورسز کے حملوں میں مزید 24 فلسطینی جان سے گئے۔ شہدا کی مجموعی تعداد 212 ہو گئی۔ شہدا میں 61 بچے اور 35 خواتین بھی شامل ہیں۔ اسرائیلی وزیراعظم نے پوری طاقت سے حملے جاری رکھنے کا اعلان کیا ہے۔

غزہ پر صیہونی فورسز کی بمباری سے ہر طرف تباہی کے مناظر ہیں، عمارتیں کھنڈرات میں تبدیل ہو چکی ہیں۔ صیہونی فورسز کے حملوں میں خواتین اور بچوں سمیت فلسطینی شہید ہوتے جا رہے ہیں۔ اسرائیل کی مسلسل آٹھویں روز بمباری سے فلسطین کے مہاجر کیمپ میں موجود ایک ہی خاندان کے دس افراد شہید ہو گئے۔ یتیم خانہ بھی دھماکے سے تباہ ہو گیا۔ ہسپتال زخمیوں سے بھر گئے ہیں۔ طبی سہولیات کا فقدان ہے۔

فلسطینی وزارت صحت نے مسلسل ہونے والی بمباری کی وجہ سے شہادتوں میں اضافے کے خدشے کا اظہار کیا ہے۔ غزہ کے رفاہ بارڈر سے کئی شدید زخمیوں کو مصر منتقل کیا گیا جن میں بچے بھی شامل ہیں۔
سرحدی ذرائع کے مطابق تین بسوں کے ذریعے 263 فلسطینی غزہ چھوڑ گئے۔ حماس کے جوابی راکٹ حملوں میں دس اسرائیلی شہری بھی مارے گئے، تین سو زخمی ہوئے، غزہ سے تین ہزار سے زائد راکٹ فائر کئے گئے ہیں۔
اسرائیلی وزیراعظم نیتن یاہو نے تل ابیب میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے غزہ پر پوری طاقت سے حملے جاری رکھنے کا اعلان کیا ہے۔