اسرائیل: مذہبی میلے میں بھگڈر مچنے سے 44 افراد ہلاک، متعدد زخمی

219

) اسرائیل میں بھگڈر مچنے سے 44 افراد ہلاک اور متعدد زخمی ہو گئے۔ اسرائیل کے وزیراعظم نیتن یاہو نے اسے بڑی تباہی قرار دیتے ہوئے ہلاکتوں پر دکھ کا اظہار کیا ہے۔

بھگڈر کے نتیجے میں متعدد افراد زخمی بھی ہوئے جنہیں ہسپتال منتقل کر دیا گیا، ریسکیو عملے نے زخمیوں کو موقع پر بھی طبی امداد دی۔ یہودیوں کا مذہبی میلہ اسرائیل کے شہر میرون میں جاری تھا جہاں یہودیوں کی بڑی تعداد سالانہ عوامی اجتماع میں شریک تھی۔

عالمی ذرائع ابلاغ نے پولیس کے حوالے سے بتایا کہ بھگدڑ چند یہودیوں کے سیڑھیوں سے پھسلنے کے سبب شروع ہوئی، زیادہ رش اور دھکم پیل کے سبب درجنوں دیگر بھی زمین پر گر پڑے جس سے ہجوم بے قابو ہوا۔ واقعے کی تحقیقات کا آغاز کر دیا گیا ہے۔

اسرائیل میں کورونا کی شدت میں کمی کے بعد اجتماع منعقد کیا گیا تھا تاہم محکمہ صحت نے وارننگ جاری کی تھی۔