بھارت:مریضوں کیلئے آکسیجن سلنڈر خریدنے کیلئے مسلم نوجوان نے 45 لاکھ کی گاڑی بیچ دی

292

بھارت میں حالیہ عرصےکے دوران کورونا کے مریضوں کی تعداد میں خوفناک حد تک اضافہ ہو گیا ہے، مہلک وباء نے ہمسایہ ملک کا صحت کا نظام بیٹھا کر رکھ دیا، تاہم وہاں مریضوں کی مدد کے لیے مسلمان نوجوان سامنے آ رہے ہیں، اسی حوالے سے ایک مسلم نوجوان شاہنواز شیخ نے مریضوں کی مدد کیلئے اپنی قیمتی کار اور زیور تک بیچ دیا۔

غیر ملکی میڈیا سمیت خود بھارتی میڈیا جہاں آج کل بھارتی وزیراعظم نریندرا مودی سرکار کی ناقص کارکردگی پر کڑی تنقید کی جا رہی ہے، وہیں اتر پردیش کے علاقے اعظم گڑھ کے 31 سالہ مسلم نوجوان کے چرچے ہورہے ہیں۔ مقامی لوگوں نے بھی مریضوں کو مفت آکسیجن سلنڈرز فراہم کرنے کے لیے ہمہ وقت مدد کو تیار رہنے پر شاہنواز شیخ کو ’آکسیجن مین‘ کا خطاب دیا ہے۔

شاہنواز شیخ کورونا کی ابتدا میں گھر کے قریب غریب بستی میں راشن کی تقسیم کیا کرتے تھے کہ اس دوران ان کی دوست کی حاملہ بہن رکشے میں ہسپتال جانے کے دوران آکسیجن کی کمی کے باعث ہلاک ہوگئیں اور اس واقعے نے دونوں دوستوں کی زندگی کا مقصد ہی بدل دیا اور دونوں نے مریضوں کو آکیسجن سلنڈرز کی مفت فراہمی کا بیڑہ اُٹھالیا۔