گلوکار نہ ہوتا تو پاکستان کرکٹ ٹیم میں ہوتا، عاصم اظہر

245

نوجوان گلوکار عاصم اظہر نے کہا ہے کہ میں پی آئی اے کی انڈر 16 کرکٹ ٹیم کے لیے بھی کھیل چکا ہوں۔ کرکٹ میرا جنون ہے۔ میں کوشش کرتا ہوں کہ کوئی میچ مس نہ ہونے پائے۔ گلوکار نہ ہوتا تو پاکستان کرکٹ ٹیم میں ہوتا۔

نوجوانوں کے پسندیدہ گلوکاروں میں عاصم اظہر نے بہت تیزی سے جگہ بنائی ہے۔ اس نوجوان کی عمر ابھی محض چوبیس برس ہے تاہم سوشل میڈیا پر ان کی فین فالوئنگ 11 لاکھ کے قریب ہیں۔

عاصم کی آواز کے پرستار کم نہیں، اس نوجوان نے پروفیشنل انداز میں کیریئر شروع کرنے سے پہلے سوشل میڈیاز پر اپنی ویڈیو اپ لوڈ کرنا شروع کیں۔ جنوری 2013ء کی بات ہے، ایک ویڈیو میں عاصم نے اپنی آواز میں پنجابی گانا ریکارڈ کیا تھا اور پھر یہاں سے ان کا سفر شروع ہوا۔

دیگر پلیٹ فارمز پر اپنی صلاحیتوں کے اظہار کا موقع ملا تو میوزک کے متوالوں کو اس نئے سنگر کی صلاحیتوں کا ادراک ہوا۔ انگلینڈ کے مختلف مقامات پر ہونے والے کنسرٹس میں بھی عاصم نے پرفارم کیا۔

ان کے والد اظہر حسین ایک معروف پیانو نواز تھے اور انہی سے عاصم میں یہ شوق پیدا ہوا۔ گلوکاری کے علاوہ اداکاری میں بھی عاصم نے قسمت آزمائی کی اور عابس رضا کی زیر ہدایت بنے ڈرامے ’’تیری چاہ میں‘‘، ماریہ واسطی اور فرحان سعید جیسے ایکٹرز کے ساتھ اداکاری کے جوہر دکھائے۔ اس انٹرویو میں نوجوان عاصم سے میوزک کے حوالے سے بہت سی دلچسپ باتیں ہوئی ہیں جو ان کے چاہنے والوں کو یقینا پسند آئیں گی۔