شمالی کوریا کے اہم فیصلے کم جونگ اُن کی بہن کرتی ہیں

289

شمالی کوریا کے رہنما کم جونگ اُن کی بہن کم یو جُونگ نے ملک میں پالیسی سازی میں اہم کردار ادا کرنا شروع کر دیا ہے۔

شمالی کوریا نے حالیہ دنوں میں جنوبی کوریا پر دباؤ بڑھانے کے لیے نئی مہم کا آغاز کیا ہے۔

مبصرین کا خیال ہے کہ اس پالیسی کے پیچھے بنیادی کردار کم جونگ اُن کی بہن کا ہی ہے جو اپنے بھائی کی مشیر ہیں لیکن اب ان کا کردار مشیر سے کہیں زیادہ اہم ہوتا جا رہا ہے۔

 کم یو جُونگ کی عمر 30 سال سے کچھ زائد ہو سکتی ہے۔ وہ کم جونگ اُن کے قریبی عزیزوں اور رشتے داروں میں واحد شخصت ہیں جو شمالی کوریا کی سیاست میں فعال کردار ادا کر رہی ہیں اور عوامی طور پر نمایاں بھی ہیں۔

کم یو جُونگ 19-2018 میں اس وقت عالمی سطح پر توجہ کا مرکز بنیں جب جنوبی کوریا میں ہونے والے سرمائی اولمپکس میں انہوں نے شمالی کوریا کے دستے کی قیادت کی۔

بعد ازاں اکثر اوقات دیکھا گیا کہ وہ ہر ممکن کوشش کر رہی ہیں کہ وہ اپنے بھائی کم جونگ اُن کی معاونت کر سکیں۔ حتیٰ کہ جب کم جونگ اُن امریکہ کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ سے ملاقات کے لیے ٹرین کے ذریعے ویتنام روانہ ہو رہے تھے تو وہ ٹرین اسٹیشن پر ان کے لیے ایش ٹرے لیے کھڑی تھیں۔

تاہم رواں برس ان کا کردار عوامی پالیسی سازی میں نمایاں ہوتا ہوا نظر آ رہا ہے۔ ساتھ ہی وہ خود کو ایک بااثر سیاسی کھلاڑی کے طور پر بھی پیش کر رہی ہیں۔