دنیا بھر میں کورونا وائرس کی تیسری لہر، بھارت میں 4 ماہ بعد سب سے زیادہ کیسز رپورٹ

218

کورونا وائرس کی تیسری لہر کے دوران کووڈ 19 کے کیسز میں ایک مرتبہ پھر دنیا بھر میں تیزی سے اضافہ دیکھا جا رہا ہے اور دنیا بھر گزشتہ ایک ہفتے کے دوران وائرس کے کیسز میں 14 فیصد کا اضافہ سامنے آیا ہے۔

حال ہی میں سامنے آنے والے اعدادوشمار کے مطابق وائرس کی تیسری لہر میں کیسز میں تیزی سے اضافہ ہو رہا ہے اور گزشتہ ایک ہفتے میں کیسز میں 14 فیصد اضافے کے پیش نظر ماہرین نے فوری طور پر پابندیوں کے اطلاق کا مطالبہ کیا ہے۔

برازیل میں بڑی تعداد میں کیسز رپورٹ ہونے کا سلسلہ جاری ہے اور گزشتہ روز مزید 73 ہزار 450 افراد میں وائرس کی تصدیق ہوئی جس کے بعد وائرس سے متاثرہ افراد کی مجموعی تعداد ایک کروڑ 4 لاکھ 19 ہزار 393 ہو چکی ہے۔

ملک میں ہفتے کو مزید 2 ہزار 331 اموات ہوئیں جس کے بعد مرنے والوں کی مجموعی تعداد 2 لاکھ 92 ہزار 856 ہو گئی ہے۔

بھارت میں بھی ایک مرتبہ پھر وائرس تیزی سے پھیل رہا ہے اور اتوار کو ملک میں مزید 43 ہزار 846 افراد میں وائرس کی تصدیق ہوئی جو چار ماہ میں کیسز کی سب سے بڑی تعداد ہے۔

اس دوران مزید 197 افراد ہلاک بھی ہوئے جس کے بعد مرنے والوں کی مجموعی تعداد ایک لاکھ 59 ہزار 755 ہو گئی ہے۔

بھارتی ریاستوں مہاراشٹر، مدھیا پردیش اور تامل ناڈو میں تیزی سے بڑھتے ہوئے کیسز کے پیش نظر اسکولوں کی بندش، لاک ڈاؤن اور عوامی مقامات پر پابندیوں کے اطلاق پر غور شروع کردیا گیا۔

امریکا میں ویکسینیشن کا عمل تیزی سے جاری ہے لیکن اس کے باوجود نئے کیسز تیزی سے بڑھنا شروع ہو چکے ہیں۔

امریکا کی 21 ریاستوں میں کیسز بہت تیزی سے رپورٹ ہو رہے ہیں جس کے سبب ماہرین صحت نے آنے والے دنوں میں احتیاط نہ کرنے پر تباہ کن حالات کا عندیا دیا ہے۔

امریکا میں ریسٹورنٹ، بار اور جم وغیرہ پر پابندیوں میں نرمی کردی گئی جس کے بعد وائرس میں تیزی سے اضافہ دیکھنے میں آیا ہے۔