میانمار میں فوجی بغاوت کے خلاف مظاہرے، طلبہ نے سرکاری عمارت کے سامنے دھرنا دیا

316

میانمار میں فوجی بغاوت کے خلاف مظاہروں کا سلسلہ جاری ہے، نوجوانوں نے سائیکلوں پر ریلی نکالی۔ طلبہ نے سرکاری عمارت کے سامنے دھرنا بھی دیا۔

دارالحکومت اور بڑے شہر ینگون میں مظاہرین سڑکوں پر نکل آئے، نوجوانوں نے سائیکلوں پر ریلی نکالی، طلبہ کے دھرنے میں شریک افراد نے پلےکارڈز اٹھا رکھے تھے جس پر جمہوریت کی بحالی اور فوجی حکومت کے خاتمے کے نعرے درج تھے۔

گذشتہ روز احتجاج میں زخمی ہونے والوں میں سے چند کی حالت تشویش ناک ہے۔ عالمی برادری کی جانب سے مظاہرین کے خلاف ریاستی تشدد کی مذمت کی جا رہی ہے، چند روز قبل نیوزی لینڈ نے میانمار کے خلاف فوجی بغاوت پر پابندیاں عائد کر دی تھیں جبکہ سیکرٹری جنرل اقوام متحدہ نے عالمی برادری سے میانمار میں فوجی بغاوت ناکام بنانے کی اپیل کر رکھی ہے۔