میانمار میں فوجی بغاوت کیخلاف ریلیاں، 70 اسپتالوں میں ہڑتال

334

رنگون: میانمار میں فوجی بغاوت کے خلاف ملک کے کئی حصوں میں عوام سڑکوں پر نکل آئے اور فوج کے خلاف شدید نعرے بازی کی جب کہ 70 بڑے اسپتالوں کے عملے نے احتجاجاً کام بند کردیا۔

عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق میانمار میں فوجی بغاوت کے نتیجے میں ایمرجنسی کے نفاذ اور ملک کی حکمراں آنگ سان سوچی کی گرفتاری پر ملک بھر میں احتجاجی ریلیاں نکالی گئیں۔ ریلیوں میں زیر حراست 73 سالہ حکمراں سوچی سے اظہار یکجہتی کیا گیا، ریلی میں زیادہ تر نوجوان طلبا نے شرکت کی۔

اس حوالے سے سب بڑی ریلی ملک کے کاوباری شہر رنگون میں نکالی گئی جس میں مظاہرین نے فوج سے واپس بیرکوں میں جانے کا مطالبہ کیا۔ احتجاج کے بعد مظاہرین پُرامن طور پر منشتر ہوگئے۔