بپِ ایپ کی مقبولیت میں اضافہ، اپیلیکیشن کے چند فیچرز جانیے

288

انقرہ: متنازع پرائیویسی پالیسی کے پروگرام کو مؤخر کرنے کے باوجود واٹس ایپ کو صارفین کا اعتماد بحال کرنے میں ناکامی کا سامنا ہے۔

رواں سال کے آغاز پر جب واٹس ایپ نے متنازع پرائیویسی پالیسی کے حوالے سے صارفین کو پیغامات بھیجنا شروع کیے تو دنیا بھر میں موجود اربوں صارفین نے پیغام رسانی اور آڈیو ویڈیو کالنگ کے لیے متبادل ایپس استعمال کرنا شروع کیں۔

صارفین نے ٹیلی گرام، سگنلز نامی ایپ کے علاوہ ترک ماہرین کی جانب سے متعارف کردہ بپِ BiP نامی ایپ بھی ڈاؤن لوڈ کی۔

ترکی نے یہ ایپ متعارف کرانے کے بعد سرکاری حکام کو بات چیت کے لیے بپِ کے استعمال کی ہدایت کی جبکہ رجب طیب اردوان نے اس ایپ کو واٹس ایپ کے متبادل کے طور پر استعمال کرنے کا اعلان کیا، علاوہ ازیں وہ ٹیلی گرام بھی استعمال کررہے تھے۔

ترک میڈیا رپورٹ کے مطابق عوام ذاتی معلومات افشاں ہونے کے خدشے کے پیش نظر واٹس ایپ کو ترک کر کے ترکی کے سماجی پلیٹ فارم بپ کی طرف راغب ہو رہے ہیں۔