سیف علی خان ایک بار پھر ہندو انتہا پسندوں کے نشانے پر

242

ممبئی: بالی ووڈ اداکار سیف علی خان ایک بار پھر ہندو انتہا پسندوں کے نشانے پر آگئے ہیں بی جے پی لیڈر رام کدم نے اداکار اور ان کی ٹیم سے گھٹنے ٹیک کر اور ہاتھ جوڑ کر معافی مانگنے کا مطالبہ کیا ہے۔

سیف علی خان ان دنوں ویب سیریز ’’تانڈو‘‘ میں کام کرنے کے باعث ایک بار پھر ہندو انتہا پسندوں کے نشانے پر آگئے ہیں۔ دراصل سیف علی خان کی نئی ویب سیریز ’’تانڈو‘‘ میں دکھائے گئے ایک سین میں ویب سیریز کے اداکار محمد ذیشان ایوب ایک اسٹیج پرفارمنس کے دوران ہندو دیوتا شیوا کا روپ دھارے کچھ نازیبا الفاظ بول دیتے ہیں۔ اور ان الفاظ کے باعث ہندو طیش میں آگئے ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ اس سین کی وجہ سے ہمارے مذہبی جذبات مجروح ہوئے ہیں۔

ویب سیریز ’’تانڈو‘‘میں دکھائے گئے اس سین کے باعث بھارت میں ہنگامہ مچ گیا ہے۔ بی جے پی لیڈر رام کدم نے سیف علی خان کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا ہے کہ اداکار  ایک بار پھر ایک ایسے پراجیکٹ کا حصہ ہیں جس سے ہندوؤں کے مذہبی جذبات مجروح ہوئے ہیں۔