امریکا میں 7 دہائیوں بعد پہلی مرتبہ خاتون کی سزائے موت پر عمل درآمد

48

امریکا میں تقریباً 7 دہائیوں بعد ایک خاتون کو حاملہ خاتون کو ان کا بچہ چھیننے کی غرض سے قتل کرنے کے کیس میں زہریلے انجکشن کے ذریعے سزائے موت پر عمل درآمد کر دی گئی۔

غیرملکی خبرایجنسیوں کی رپورٹ کے مطابق امریکی جسٹس ڈپارٹمنٹ کا کہنا تھا کہ 52 سالہ لیزا مونٹمگری کو ریاست انڈیانا کے ٹیرے ہاؤٹ میں ایسٹرن ٹائم کے مطابق صبح ایک بج کر 31 منٹ پر مردہ قرار دیا گیا۔

بیان میں کہا گیا کہ پھانسی ‘وفاقی عدلیہ کی متفقہ تجویز کردہ اور میسوری کے مغربی ضلع کی عدالت کی جانب سے سنائی گئی سزائے موت کو مدنظر رکھ کر دی گئی ہے’۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.