جارجیا میں پہلی مرتبہ سیاہ فام سینیٹر، ڈیموکریٹس کی سینیٹ میں اکثریت کا امکان

355

جارجیا میں سینیٹ کی دو نشستوں پر ہونے والے انتخاب میں ڈیموکریٹس کے رافیل وارنوک ریاستی تاریخ میں پہلے سیاہ فام سینیٹر بن گئے جس کے بعد سینیٹ میں ڈیموکریٹس کی اکثریت کا امکان پیدا ہوگیا۔

خبر ایجنسی اے پی کی رپورٹ کے مطابق اٹلانٹا چرچ میں 15 سال تک پادری کی حیثیت سے فرائض انجام دینے والے رافیل وارنوک نے ری پبلکن اُمیدوار کیلی لیوئفلر کو شکست دے دی۔

جارجیا میں ڈیموکریٹس کی کامیابی صدر ڈونلڈ ٹرمپ اور ان کی پارٹی کے لیے ایک دھچکا ہے جہاں ان کے حامیوں کاغلبہ رہا ہے اور اپنی آخری ریلی بھی جارجیا میں سینیٹ کے اُمیدواروں کیلی لیوئفلر اور ڈیوڈ پیرڈیو کے ساتھ نکالی تھی۔

ڈیموکریٹس کی کامیابی کے بعد اب نظریں دوسری نشست پر مرکوز ہوگئی ہیں کیونکہ مزید کامیابی کی صورت میں ڈیموکریٹس کو سینیٹ میں اکثریت حاصل ہوگی اور کانگریس میں نومنتخب صدر جوبائیڈن کا پلڑا بھاری ہوگا، جو 20 جنوری کو اپنا منصب سنبھال لیں گے۔

ماہرین، جارجیا میں حالیہ نتائج کو ریاست میں سیاسی تبدیل سے تعبیر کررہے ہیں کیونکہ ری پبلکن کو یہاں دو دہائیوں سے زائد عرصے تک واضح کامیابی ملتی رہی ہے۔

اس سے قبل 3 نومبر کو ہوئے صدارتی انتخاب میں ڈیموکریٹس کے جوبائیڈن نے بھی جارجیا میں کامیابی حاصل کی تھی جو 1992 کے بعد کسی ڈیموکریٹک اُمیدوار کی پہلی جیت ہے۔

سینیٹ کی نشست پر کامیاب ہونے والے رافیل وارنوک نے اپنے حامیوں کے لیے پیغام میں اپنے اور خاندان کے مالی حالات کا ذکر کیا اور بتایا کہ ان کی والدہ روئی چن کر اپنے بچوں کو پالتی تھیں۔