آسٹریلیا نے قومی ترانے میں تبدیلیاں کردیں

269

ماضی میں سلطنت برطانیہ کی کالونی رہنے والے ملک آسٹریلیا نے اپنے قومی ترانے میں پہلی بار تبدیلیاں کردیں۔

آسٹریلوی حکومت نے 2021 کے پہلے ہی دن میں قومی ترانے میں تبدیلیوں کی تصدیق کی اور بتایا کہ قومی ترانے کی دوسری سطر میں نمایاں تبدیلی کردی گئی۔

آسٹریلوی ترانہ انگریزی زبان میں ہے، تاہم اسے وہاں کی پرانی و آبائی زبانوں میں بھی گایا جاتا ہے اور وہاں کے اصلی لوگ ترانے کو تبدیل کرکے گاتے رہے ہیں۔

آسٹریلیہ کے حالیہ ترانے کو 1984 میں حکومتی سطح پر قومی ترانے کے طور پر نافذ العمل کرنے کا اعلان کیا گیا تھا۔

اس سے قبل آسٹریلیا میں سرکاری سطح پر ملکہ برطانیہ کی تعریف کا ترانہ بجایا اور چلایا جاتا تھا۔

 جس ترانے کو 1984 میں حکومتی سطح پر قومی ترانہ مانا گیا تھا، اسے ابتدائی طور پر 1878 میں تیار کیا گیا تھا۔

مذکورہ ترانہ ابتدائی طور پر دیسی آسٹریلوی افراد کی ثقافت و محبت کو دیکھتے ہوئے لکھا گیا تھا، تاہم اس وقت آسٹریلیا میں انگریزوں کا راج تھا اور اس کی تشکیل نو کی گئی تھی، اس لیے اس میں ایسے الفاظ استعمال کیے گئے تھے، جس سے ظاہر ہوتا تھا کہ آسٹریلوی لوگ نئی قوم ہے۔

آسٹریلوی افراد کو نئی قوم کے طور پر ترانے میں پیش کرنے پر وہاں کے آبائی افراد حکومت سے نالاں تھے اور ان کا دیرینہ مطالبہ تھا کہ ترانے کو تبدیل کیا جائے۔

قدیمی افراد کی طویل جدوجہد کے بعد بلآخر یکم جنوری 2021 کو آسٹریلوی وزیر اعظم نے اسکارٹ موریسن نے ایک اخباری مضمون میں تصدیق کی کہ قومی ترانے کو تبدیل کردیا گیا۔

قومی ترانے کی دوسری لائن میں اب ‘ نوجوان اورآزاد’ کی جگہ ہم ‘ایک اور آزاد’ کے الفاظ استعمال کیے جائیں گے۔

ترانے کے انگریزی جملوں کو (For we are young and free) سے تبدیل کرکے (For we are one and free) کردیا گیا۔

خیال کیا جا رہا ہے کہ 26 جنوری کو یوم آسٹریلیا کے موقع پر نئے تبدیل شدہ ترانے کو وزیر اعظم سمیت دیگر حکومتی عہدیدار مل کر گائیں گے، جس کے بعد اس کی نئی موسیقی بھی ترتیب دی جائے گی۔