کھیلوں کی عالمی عدالت کا روسی کھلاڑیوں پر پابندی کا بڑا فیصلہ

481

سوئٹزر لینڈ : کھیلوں کی عالمی ثالثی عدالت نے ڈوپنگ قوانین کی خلاف ورزی میں ملوث روسی ایتھلیٹس پر پابندی کا دورانیہ چار سال سے کم کرکے دو سال کردیا۔

عدالت نے روس کو دو سال کے لیے کھیلوں کے اہم مقابلوں کی میزبانی کے لیے امیدوار بننے سے بھی روک دیا، پابندی میں دوسال کی کمی کے باوجود روسی ایتھلیٹس ٹوکیو اولمپکس 2020 میں بھی حصہ نہیں لے سکیں گے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق کھیلوں کی ثالثی عدالت نے روس کے ایتھلیٹس پر کھیلوں کے بڑے ایونٹس میں آئندہ دو سال کے لیے اپنے ملک کے پرچم تلے کھیلنے پر پابندی لگا دی ہے۔

روسی اتھلیٹس کو انفرادی حیثیت میں کھیلوں میں شرکت کی اجازت ہوگی بشرطیکہ ان پر کسی مجاز ادارے کی جانب سے معطلی کی پابندی عائد نہ کی گئی ہو۔