جرمن یونیورسٹی کےلیے پاکستانی طالب علم نے تحقیقی اینی میشن بنالی

310

لاہور: پاکستانی نوجوان سیّد منیب علی نے جرمنی کی ’فرائی یونیورسٹی‘ میں پلینٹری سائنس کے ماہر، ڈاکٹر نوزیر خواجہ کے تعاون و اشتراک سے ایک تھری ڈی اینی میشن تیار کی ہے جس میں سیارہ زحل کے چاند اینسیلاڈس پر زندگی کے حوالے سے اہمیت رکھنے والے مختلف کیمیائی تعاملات (کیمیکل ری ایکشنز) مختصراً پیش کیے گئے ہیں۔

واضح رہے کہ اگرچہ پاکستان میں بہت سے اینی میشن ہاؤسز موجود ہیں لیکن سنجیدہ نوعیت کی سائنسی مصوری اور سائنسی اینی میشنز تیار کرنے والوں کی تعداد نہ ہونے کے برابر ہے۔

’’ایکسپریس نیوز‘‘ سے گفتگو کرتے ہوئے سیّد منیب علی نے بتایا کہ اس بارے میں تمام ضروری متعلقہ سائنسی معلومات انہیں ڈاکٹر نوزیر خواجہ نے فراہم کی تھیں جبکہ انہیں استعمال کرتے ہوئے ’’تھری ڈی اینی میشن‘‘ کو وژولائز کرنے سے لے کر بنانے تک کا تمام کام انہوں نے بغیر کسی کی مدد کے، خود انجام دیا ہے۔

یہ بھی بتاتے چلیں کہ پاکستانی نژاد ڈاکٹر نوزیر خواجہ جرمنی کی فرائی (Freie) یونیورسٹی میں علمِ سیارگان (پلینٹری سائنس) کے ماہر ہیں جن کی قیادت میں سائنسدانوں کی ایک ٹیم نے 2018 اور پھر 2019 میں زحل کے چاند اینسیلاڈس پر ایک اہم نامیاتی سالمہ (آرگینک مالیکیول) دریافت کیا تھا جو زندگی کی وجود پذیری کے نقطہ نگاہ سے بہت اہمیت رکھتا ہے۔