ڈونلڈ ٹرمپ کو ابھی تک انتخابات میں‌ جیت کی امید

308

صدر ڈونلڈ ٹرمپ کو صدارتی انتخابات میں شکست کے بعد بھی اپنی فتح کی امید ہے۔

میڈیا رپورٹ کے مطابق 3نومبر کے الیکشن کے بعد جارجیا میں ہونیوالی پہلی ریلی میں ٹرمپ نے ایک بار پھر انتخابی فراڈ کا ذکر کیا اور گورنر برائن کِمپ کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے الزام لگایا کہ الیکشن کے دوران پوسٹل بیلٹس زیادہ ہونے کی وجہ سے بڑے پیمانے پر فراڈ ہوا لیکن اس کے کوئی شواہد نہیں ملے ۔

2 گھنٹے کی طویل تقریر کے دوران ٹرمپ نے ریلی کے شرکا سے کہا کہ وہ اب بھی انتخابات جیت سکتے ہیں۔ وہ جارجیا میں دو رپبلکن سینیٹرز کی مہم کی حمایت میں پہنچے تھے جو دوبارہ انتخابات کا مطالبہ کر رہے ہیں۔ ٹرمپ کا کہنا تھا  الیکشن میں دھاندلی کی گئی اس کے باوجود ہم انتخاب جیتیں گے۔  ریلی میں شریک ٹرمپ کے حامیوں نے  مزید چار سال ،  چوری بند کرو ، اور   امریکہ کو پھر عظیم بنانا ہے  کے نعروں پر مبنی بینرز اور پلے کارڈز اٹھا رکھے تھے۔

واضح رہے جو بائیڈن کو مقننہ میں 306 ووٹوں کے ساتھ برتری حاصل ہے جبکہ ٹرمپ232 سیٹیں جیت سکے ہیں۔نومنتخب صدر 20جنوری کو حلف لیں گے ۔